بچیوں کو ورغلا کر مسلمان کرکے عدالت میں ہمارے خلاف بیان دلوایا گیا ہے

میرپورخاص ( ایم وی این نیوزبیورورپورٹ) میرپورخاص کے علائقے اختر کالونی کی رہائشی ھندو ں خاندان کے والدین نے ایوان صحافت میرپورخاص میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سپریم کورٹ آف پاکستان، سندھ ھاء کورٹ کے چیف جسٹس صاحبان سے، بچوں کی بہتری کے لئے کام کرنے والے غیر سرکاری اداروں اور حکومت سے اپیل کی ہے کہ انکی بچیوں کو حیدر آباد دارلعمان سے نکلواکر انکے حوالے کیا جائے۔ پریس کانفرنس کرتے ہوئے دس سالہ پوجا اور اور چھ سالہ جمنا کی والدین کی آنکہوں سے آنسوں آگئے اور اپنی بچیوں کی واپسی کے لئے بھینک مانگتے رہگئے۔ میڈیا سے بات چیت میں بیچوں کے الدین سوموں اور شریمتی راجو نے بتایا کہ وہ بہت زیادہ غریب ہیں جھوپڑیوں میں رھتے ہیں برتن فروخت کرکے دو وقت کی روٹی کماتے ہیں انکی بچیوں کو ورغلا کر مسلمان کرکے عدالت میں ہمارے خلاف بیان دلوایا گیا ہے انکی بچیاں نا بالغ ہیں اور کم عمری کی وجہ سے ایک سازش کے تحت انکے خلاف خلاف بیان دلوا کر دارلعمان بجھوا دیا گیا ہے اور انکی ایک بھی نہیں سنی گئی ۔ متاثرہ والدین نے اپیل کی کے انکی بچیوں کو فوری طور پر انکے حوالے کیا جائے۔۔دوسری جانب دو معصوم ھندوں بچیوں کو ورغلا کر اسلام قبول کرواکر عدالت میں پیش کروانے پر ھندو پنچائت میرپورخاص کے صدر سیٹھ لچھمن داس نے نوٹس لے لیا

0 comments

Write Down Your Responses