ایم کیو ایم کی یوم سوگ کی اپیل پر میرپورخاص میں مکمل طور پر شٹر ڈاؤن

میرپورخاص (ایم وی این نیوز بیورورپورٹ) ایم کیو ایم کی یوم سوگ کی اپیل پر میرپورخاص میں مکمل طور پر شٹر ڈاؤن رہا، ہڑتال کے دوران تمام کاروباری مراکزی بند رہے اور پیٹرول پمپس سی این جی اسٹیشنس بند رہیں ۔ ٹرانسپورٹ بند رہنے سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔ شہر بھر سمیت داخلی اور خارجی راستوں پر پولیس کی بھاری نفری تعینات رہی۔ شہر کے مختلف علائقوں میں نا معلوم افراد نے ٹائر نذر آتش کئے اور گاڑیوں کو روکنے کی بھی کوشش کی گئی۔ دوسری جانب ایم کیو ایم میرپورخاص زون کے زونل انچارج مجیب الحق و اراکین زونل کمیٹی نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہی ۔انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے بے گناہ کارکنان بھی پاکستانی ہیں انہیں اغواء کرکے بہیمانہ تشدد کرکے قتل کردینا انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کی بدترین مثال ہے۔انہو ں نے کہا کہ ایم کیو ایم ملک کی تیسری اور سندھ کی دوسری بڑی جماعت ہے ۔ایم کیو ایم کے کارکنان کے ساتھ امتیازی سلوک کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ایم کیو ایم نے ہمیشہ جمہوریت کے تسلسل کو برقرار رکھنے اور استحکام پاکستان کی بات کی ہے لیکن ایم کیو ایم کے بے گناہ کارکنان کو لاپتہ کرکے ان کی مسخ شدہ لاشیں کراچی کے مختلف علاقوں میں پھینک دی جاتی ہیں۔پاکستان کا آئین و قانون اس بات کی اجازت نہیں دیتا کہ گرفتار شدگان کو بغیر مقدمہ چلائے قید میں رکھا جائے یا انہیں بہیمانہ تشدد کرکے قتل کردیا جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ ایم کیو ایم اور سندھ کے مخصوص طبقہ آبادی کو کچلنے کے لئے مذموم سازش کے تحت انسانیت سوز مظالم کا سلسلہ تیز کردیا گیا ہے لیکن استحصالی عناصر بھول بیٹھے ہیں کہ ماضی میں بھی ان کی تمام تر سازشیں ناکا م ہوئی تھیں اور اب بھی ایم کیو ایم کے کارکنان اور حق پرست عوام ایسی سازشوں کو ناکام بنا دیں گے اور دشمنوں کو منہ کی کھانی پڑے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ ایم کیو ایم پرامن جماعت ہے اور ملک کے غریب و مظلوم عوام کے حقوق کے حصول کے لئے عملی جددجہد کررہی ہے۔انہوں نے چیف جسٹس سپریم کورٹ اور چیف آف آرمی اسٹاف سے مطالبہ کیا کہ بیرونی اشاروں پر سیاسی مفادات کے حصول کے لئے ایم کیو ایم کے بے گناہ کارکنان کے اغواء اور ماورائے عدالت قتل کا نوٹس لیا جائے اور سندھ کے مخصوص طبقہ آبادی کا قتل عام روکنے کے لئے سخت ترین اقدامات اٹھائے جائیں۔

0 comments

Write Down Your Responses