لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے کوئٹہ سے پیدل آنے والا سولہ رکنی لانگ مارچ پتوکی پہنچ گیا

پتوکی (رپورٹ ٹی اے خاں) لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے کوئٹہ سے پیدل آنے والا سولہ رکنی لانگ مارچ پتوکی پہنچ گیا لانگ مارچ میں مر د وخواتین شامل ہیں لانگ مارچ جب ملتان روڈ بائی پاس پہنچا تو موٹر وے پولیس اور سٹی پولیس نے انکا استقبال کیا ۔
لانگ مارچ کے پہنچنے پر اس کے امیر قدیر خاں بلوچ نے بتایا کہ لاپتہ افراد کی بازیابی سابقہ حکومتوں کی ناکامی تھی اس وقت پاکستان میں اتحاد اور یکجہتی کی ضرورت ہے ہمیں 88دن ہوگئے ہیں بلوچستان اور کوئٹہ سے نکلے ہوئے اور اسلام آباد کی طر ف جارہے ہیں اسلام آباد اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے دھرنا دیں گے اور احتجاج کریں گے اور انہیں ایک یادداشت بھی پیش کریں گے قدیر خاں بلوچ نے بتایا کہ دیگر ملکوں کے سفارت کاروں نے بھی ہم سے رابطہ کیا ہے کہ جو بلوچستان میں انسانی حقوق کی پامالی ہورہی ہے پاکستان میں اسکے خلاف آواز اٹھائیں گے جب لانگ مارچ گزشتہ رات ملتان روڈ پر جب پتوکی کی جانب آرہا تھا تو ایک ٹرک کی سائیڈلگنے سے ایک خاتون اور ایک مرد زخمی بھی ہوگیا اس کے باوجود ہمارے حوصلے پست نہیں ہوئے اور ہم اسلام آباد جا کر لاپتہ ہونے والے افراد کی بازیابی کیلئے پوری جدوجہد کریں گے۔

0 comments

Write Down Your Responses