ہارون آباد میں سات قادیانیوں نے اسلام قبول کر لیا

ہارون آباد (ایم وی این نیوز نمائندہ خصوصی ) ہارون آباد میں سات قادیانیوں نے اسلام قبول کر لیا ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پاکستان سٹی ہارون آباد کے رہائشی محمود باجوہ ،چار بیٹوں رضوان ،عرفان ،طاہر اور مدثر سمیت بیوی اور بیٹی نے اسلامی تعلیمات سے متاثر ہو کر انٹر نیشنل ختم نبوت کے سیکرٹری نشرو اشاعت مولانا قاری محمد رفیق اور قاری غلام رسول کی موجودگی میں اسلام قبول کر لیا ۔بعد ازاں انٹر نیشنل ختم نبوت کے سیکرٹری نشرو اشاعت مولانا قاری محمد رفیق نے انجمن صحافیاں و پریس کلب رجسٹرڈ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری پارلیمنٹ نے قادیانیوں اور انکے خلیفہ وقت کیساتھ سوچ سمجھ کر سوالوں جوابات کی روشنی میں متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا کہ قادیانیوں کا اسلام سے کوئی تعلق نہ ہے جس پر قادیانیوں نے پارلیمنٹ کے اس فیصلے کو نہ مانتے ہوئے عدالتوں میں چیلنج کردیا جبکہ عدالتوں نے بھی انکے خلاف فیصلہ دیا ۔پوری دنیا میں ملک کے قوانین میں خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانون نافذ کرنے والے نوٹس لیتے ہیں جبکہ ہمارے ہاں یہ قانون ہے کہ قانون شکنی کرنے والوں کے خلاف نوٹس لینے کے بجائے نشاندہی کرنے والوں کو فساد کی جڑ قرار دیا جاتا ہے ۔ہمیں ایسے لوگوں کی ذہنیت پر بڑا افسوس ہوتا ہے کہ کیا ہمارے ملک کا قانون فساد پر مبنی ہے ؟ اگر ملکی قانون کے فیصلوں پر عملدرآمد کروانا فساد ہے تو اس کے خلاف ورزی کرنا کیا ہوگا ؟ انہوں نے مزید کہا کہ ہم قانون کو ہاتھ میں نہیں لیتے بلکہ قانون کا دروازہ کھٹکھٹا تے ہیں کہ یہاں پر قانون کی خلاف ورزی ہو رہی ہے لیکن اس کا نتیجہ یہ نکلتا ہے کہ اُلٹا قانون مدعی کے خلاف تحقیقات شروع کردیتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں ایسے ہتھکنڈوں سے خوف زدہ نہیں کیا جاسکتااو ہماری 27سالہ اس جدوجہد میں ایک بھی قانون شکنی کا واقعہ نہیں ہوا کیونکہ ہم امن پسند ہیں اور ہمیں اس بات پر فخر ہے کہ ہم تحفظ ختم نبوت اور تحفظ ناموس رسالت ؐ کرتے ہیں اور کرتے رہیں گے ۔

0 comments

Write Down Your Responses