میلاد کے مقدس مہینے میں دہشت گردی اسلام دشمنی ہے،حکومت دہشت گردوں سے نمٹنے کی صلاحیت نہیں رکھتی،صاحبزادہ حامد رضا

فیصل آباد( سلیم شاہ ،چیف انوسٹی گیشن سیل ) سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ محمد حامد رضا نے کہا ہے کہ میلاد کے مقدس مہینے میں دہشت گردی اسلام دشمنی ہے۔ دہشت گردوں کو کھلے عام سزائیں دینا ہی لاقانونیت کا واحد حل ہے۔ حکومت دہشت گردوں سے نمٹنے کی صلاحیت نہیں رکھتی۔ حکمرانوں نے قوم کو مذاکرات کی بتی کے پیچھے لگا رکھا ہے۔ ایٹمی ریاست کا مٹھی بھر دہشت گردوں کے سامنے جھک جانا المیہ ہے۔ جنّت کا لالچ دے کر خودکش حملہ آور تیار کرنے والوں کی سرکوبی ضروری ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنی اتحاد کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ملک بخش الہی ، مفتی محمد سعید رضوی ، محمد اسد رضوی، صاحبزادہ محمد حمیدالدین رضوی، میاں فہیم اخترودیگر نے شرکت کی۔صاحبزادہ محمد حامد رضا نے مزید کہا کہ عالمی منصوبہ بندی کے تحت پاکستان میں فرقہ واریت پھیلائی جا رہی ہے۔ امریکہ ہر معاملے میں اقوام متحدہ کو استعمال کرتا ہے۔ حکمران امریکہ کے دباؤ پر بھارت سے دوستی کی پینگیں بڑھا رہے ہیں۔ ہمارے حکمرانوں کو بیرونی طاقتوں کے خوف اور دباؤ سے نکلنا ہو گا۔ پاکستان دو قومی نظریہ کے تحت بنا ہے۔ یہاں سیکولرازم کی کوئی گنجائش نہیں۔ آئی ایم ایف کی شرائط پوری کرنے کے لیے ہر چیز کی قیمت بڑھائی جا رہی ہے۔ ملک میں دہشت و وحشت کا راج ہے۔ مسٹر اور مولوی دہشت گردوں کے خلاف متحد ہو جائیں۔ دہشت گردی کے معاملے میں قوم کو تقسیم کرنے والے مجرم ہیں۔ پوری قومی قیادت کو دہشت گردی کے ایشو پر یکسو ہونا چاہیے۔ دہشت گردی کے جواز پیش کرنے والے سکیورٹی فورسز کے حوصلے توڑتے ہیں۔ پوری قوم سکیورٹی فورسز کی قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور دہشت گردوں کا نشانہ بننے والے سکیورٹی اہلکار اور افسر قوم کے ہیرو ہیں۔ دہشت گردی پر خاموشی اختیار کرنا جرم ہے۔ ملک بچانا ہے تو دہشت گردی کا خاتمہ لازم ہے۔ 

0 comments

Write Down Your Responses