شوگر ملز انتظامیہ گنے کی ناجائزکٹوتی ،گنے کی ٹرالیوں کاوز ن میں جوہیراپھیری کے رویہ کوترک کریں۔اس سے گنے کے کاشتکاروں کوشدیدمالی نقصان ہورہاہے ۔ شوگرملزانتظامیہ 15 دن کے اندرگنے کی قیمت کی ادائیگی کویقینی بنائیں۔

ڈیرہ اسماعیل خان(انوسٹی گیشن ٹیم)ایوان زراعت ڈیرہ اسماعیل خان کااجلاس زیرصدارت حاجی عبدالرشیددھپ منعقدہوا۔جسمیں پروفیسر ڈاکٹراعجازاحمدخان چےئرمین شعبہ ایگرانومی زرعی فیکلٹی گومل یونیورسٹی نے بطورمہمان خصوصی شرکت کی۔اجلاس میں زمینداروں کی کثیرتعدادنے شرکت کرکے علاقہ کے زرعی مسائل پرگفتگو کی۔اجلاس سے ڈاکٹروحیداللہ خان علیزئی‘محمداقبال کھر‘محمدرمضان خان بلوچ‘شیردل خان وزیر‘ملک غلام انورخان اورحاجی عبدالرشیددھپ نے خطاب کرتے ہوئے مقامی شوگرملزانتظامیہ سے مطالبہ کیاکہ وہ گنے کی ناجائزکٹوتی کے رویہ کوترک کردیں اس سے گنے کے کاشتکاروں کوشدیدمالی نقصان ہورہاہے ۔گنے کی ٹرالیوں کاوز ن کرتے وقت وزن میں جوہیرپھیرکیاجارہاہے اس کوزمینداروں سے چھپایاجاتاہے لہٰذاملزکے اہلکاروزن کرنے میں دیانتداری کریں نیزشیڈول کے مطابق شوگرملزانتظامیہ 15 دن کے اندرگنے کی قیمت کی ادائیگی کویقینی بنائیں۔اجلاس کوبتایاگیاکہ نہروں میں10جنوری سے پانی بندکیاجارہاہے۔چونکہ ڈیرہ گرم علاقہ ہے اورفروری کے مہینے میں گرمی کی وجہ سے گندم کی فصل کوپانی کی اشدضرورت ہوتی ہے اس لئے محکمہ آبپاشی سے مطالبہ ہے کہ یکم فروری سی نہروں میں پانی چھوراجائے تاکہ گندم ودیگرکاشت شدہ فصلات کونقصان نہ پہنچے۔اجلاس میں پروفیسرڈاکٹراعجاز احمدخان نے کہاکہ علاقہ کی آب وہوا کے مطابق مختلف فصلات جدید سائنسی تحقیقات کے مطابق کاشت کرنے سے خاطرخواہ منافع حاصل کیاجاسکتاہے لہٰذاڈیرہ کی زرعی ترقی کیلئے زمیندار اورزرعی سائنسدان باہمی تعاون اورمشورہ سے کام کریں

0 comments

Write Down Your Responses