چور،ڈاکو، دن دیہاڑے من مرضی ،اور پولیس فرضی کا رروائیاں ڈالنے میں مصروف

سرگودھا(انویسٹی گیشن ٹیم) چور،ڈاکو، دن دیہاڑے من مرضی ،اور پولیس فرضی کا رروائیاں ڈالنے میں مصروف عمل ہیں بیان کیا جاتا ہے کہ گزشتہ پندرہ روز سے سرگودھا میں چوروں ڈاکوؤں نے اودھم مچا رکھی ہے ۔روزانہ کی بنیاد پر اگر کہا جائے سرگودھا بھر میں درجنوں چوریاں اور ڈکیتیوں کی وارداتیں ہورہی ہیں تو غلط نہ ہوگا۔ اور پچھلے ہفتہ دن دھاڑے تحصیل بھیرہ میں سورج کی روشنی میں کروڑوں کا سونا لوٹ لیا گیا۔جب کوئی چوری یا ڈکیتی کی واردات ہوتی ہے تو پولیس ہائی الرٹ ہوجاتی ہے کچھ گھنٹے کے بعد پولیس پھر نارمل پوزیشن اختیار کرلیتی ہے اور جب پھر کوئی جرائم پیشہ عناصر اپنا کام دکھادیں تو پولیس بھر آنکھیں کھول کر ادھر اُدھر دیکھنا شروع کردیتی ہے۔یہ بات بھی بیان کی جارہی ہے کہ اشتہاریوں کی گرفتاری کے چکر میں سرگودھا پولیس نے چادر اور چاردیواری کے قانون کی جو خلاف ورزیاں کی اس کی کہیں مثال نہیں ملتی۔رات کے آخر پہر میں پولیس چادر اور چاردیواری کی پامالی کرتے ہوئے با پردہ گھریلوں خاتون کے ساتھ بد تمیزی اور زور کو ب کرنے کے علاوہ دودھ پیتے بچوں کی چیخیں بھی پولیس کو روک نہ سکیں عوامی سماجی حلقوں نے اس بارے میں گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ڈی پی او سرگودھا راجہ بشارت سے مطالبہ کیا ہے کہ چوروں ،ڈکیتوں اور اشتہاریوں کو ضرور پکڑیں لیکن پولیس قانون شکن نہ بنے اور چا در چار دیواری کی پامالی نہ کریں۔

0 comments

Write Down Your Responses