مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا اہل سنت بھائیوں کے ہمراہ ریلیاں نکالی گئیں

لاہور ( پ،ر)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے زیراہتمام بارہ ربیع الاول کے حوالے سے لاہور، راولپنڈی، کراچی، ملتان، کوئٹہ ، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر سمیت دیگر ملک کے دیگر شہروں میں عید میلادالنبی کے حوالے سے اہل سنت بھائیوں کے ہمراہ ریلیاں نکالی گئیں اور جلوسوں میں بھرپور شرکت کرکے اتحاد امت کا فقید المثال مظاہرہ کیا گیا۔ کراچی میں نمائش چورنگی پر مجلس وحدت مسلمین کے زیراہتمام لبیک رسول اللہ ریلی نکالی گئی جس میں بڑی تعداد میں شیعہ سنی افراد نے شرکت کی۔ ملک بھر میں جلوسوں میں سبیلیں لگائی گئیں، اسٹیج لگائے گئے جبکہ ایم ڈبلیوایم کے تمام صوبائی دفاتر بشمور گلگت بلتستان، آزاد کشمیر اور ضلعی دفاتر پر چراغاں کیا گیا،بارہ ربیع الاول کے سلسلہ میں تحریک منہاج القرآن کے زیراہتمام ملک بھرمیں ہونے والے بیشتر کانفرنسز میں مجلس وحدت مسلمین کے قائدین نے شرکت کی اور خطابات کیے۔ ملتان میں ایم ڈبلیو ایم کے زیراہتمام سی آئی ڈی آفیسر چودھری اسلم اور ہنگوکے شہید طالبعلم اعتزاز حسن کی یاد میں چراغاں کیا گیا اور انہیں خراج تحسین پیش کیا گیا۔ تحریک منہاج القرآن کے زیراہتمام مینار پاکستان پر ہونے والی کانفرنس میں مجلس وحدت مسلمین کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ محمد امین شہیدی نے شرکت کی اور کانفرنس سے خطاب کیا۔ راولپنڈی میں مرکزی جلوس میں ایم ڈبلیو ایم کی طرف سے اسٹال لگایا گیا اور نعت خوانی کے مقابلے کرائے گئے، نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے نعت خوانوں میں انعامات بھی تقسیم کیے گئے۔مجلس وحدت مسلمین کے زیراہتمام گلگت کی تاریخ میں پہلی مرتبہ میلاد کاسب سے پروگرام منعقد کیا گیا جس میں سنی شیعہ اکابرین نے شرکت کے اتحاد و حدت کا مظاہرہ کیا گیا۔ آزاد کشمیر میں مظفرآباد میں ایم ڈبلیو ایم کی مقامی قیادت نے پھرپور شرکت کی۔اس موقع پر مقرین کا کہنا تھا کہ میلاد کے جلوسوں میں شیعہ سنی بھرپور شرکت نے ثابت کردیا ہے کہ ملک میں کوئی شیعہ سنی مسئلہ نہیں ہے، فقط چند مٹھی بھر دہشتگرد ہیں جنہوں نے ملک کے امن کو غارت کردیا ہے۔اگر ریاست اپنی بھرپور طاقت کے ساتھ ملک دشمن عناصر کیخلاف کارروائی کرے تو ان کا سدباب کیا جاسکتا ہے۔ آج ملک میں کوئی محفوظ نہیں ، کبھی فوجیوں پر تو کبھی سوئلین پر حملے ہوتے ہیں۔ طالبان وطن عزیز کے غدار ہیں جنہیں بھرپور طاقت سے کچلا جائے۔ اس موقع پر ملک میں امن وامان کے حوالے سے خصوصی دعائیں کی گئیں۔

0 comments

Write Down Your Responses