حکومت کی جانب واپڈا کی نجکاری کے فیصلے کے خلاف حیسکو میرپورخاص سمیت میرپورخاص ڈویزن کے چاروں اضلاع میں احتجاجی ریلیاں

میرپورخاص ( بیورو ر پورٹ) حکومت کی جانب واپڈا کی نجکاری کے فیصلے کے خلاف حیسکو میرپورخاص سمیت میرپورخاص ڈویزن کے چاروں اضلاع میں دفاتر کی تالا بندی کرکے احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں۔ ریلیاں میرپورخاص، ڈگری، جھڈو، میرواھ گورچانی، کوٹ غلام محمد، نوکوٹ، سامارو، پتھورو، عمرکوٹ، کنری، مٹھی،نگر پارکر، ڈیپلو، کھپرو، سندھڑی، ٹنڈو �آدم، سانگھڑ، سنجھورو، جام نواز علی، شہداد پور اور دیگر حیسکو آفیسوں کی تالا بندی کرکے احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں۔ مرکزی ریلی ڈویزنل حیسکو آفس میرپورخاص سے آل پاکستان واپڈا ہائڈرو الیکٹرک ورکر یونین میرپورخاص کے ڈویزن چیئرمن اکبر خان لغاری کی قیادت میں نکالی ریلی کے سیکڑو شرکاء واپڈا ملازمین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینر اٹھاکر حیدرآباد میرپورخاص روڈ پر دھرنا دیا ۔ مظاہرین میں آل پاکستان واپڈا ہائڈرو الیکٹرک ورکر یونین میرپورخاص کے ڈویزن چیئرمن اکبر خان لغاری ، ڈویزنل وائس چیرمن ملک عبدالکریم، اکرم گجر ، طاہر راجپوت، شاھد کاظمی، یوسف سومرو ، اقبال لودھی، محمد شریف ، ناصر احمد، محمد صدیق شاکر علی اور دیگر نے ایوان صحافت کی ٹیم سے بات چیت میں کہا کہ کہا اگر حکومت پیپکو کی نجکاری یا پاور ہاؤسز کی انتظامی امور نجی انتظامیہ کے حوالے کی گئی تو پورے ملک کی بجلی بند کردی جائے گی۔ انہوں نے نواز شریف کی حکومت جب بھی اقتدار میں آتی ہے وہ ریاستی اداروں کو اپنے منشا کے مطابق نجکاری کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ اور نواز شریف حکومت میں آنے سے پہلے کہتے تھے کہ وہ چھ ماھ میں ملک سے لوڈ شیڈنگ ختم کردینگے لیکن وہ ناکام رہے۔ انہوں نے ملک میں مہنگئی بجلی۔ لوڈ شیڈنگ ، گئس کا بحران، دھشتگردی حکومت کے کنٹڑول میں نہی ہے اور حکومت نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں مہنگائی کے حساب سے کوئی بھی اضافہ نہیں کیا اور موجودہ حکمران عوامی مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں اور حکومت کی ناکام پالیسیوں سے مہنگائی بڑھ چکی ہے ا ور سب سے زیادہ ناانصافی محنت کش طبقے سے ہورہی ہے۔ مظاہرین نے واپڈا کی نجکاری کے فیصلہ فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے ا ور خبردار کیا اگر ایسا ہوا تو وہ ملک بھر کی بجلی بند کرینگے۔ 

0 comments

Write Down Your Responses