عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ وسلم محروموں اور حقداروں کو حقوق دینے کا دن ہے

ملتان( انچارج انویسٹی گیشن سیل) عید میلاد النبیؐ محروموں اور حقداروں کو حقوق دینے کا دن ہے ۔ سرائیکی صوبہ قائم کر کے حکمران وسیب کے کروڑوں انسانوں کو ان کا حق دیں ۔ دیرہ اسماعیل خان سے آئے ہوئے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے سرائیکستان قومی کونسل کے چیئرمین پروفیسر شوکت مغل نے کہا کہ آج جہاں عید میلاد النبیؐ کے موقع پر ہر طرف چراغاں اور خوشیاں منائی جا رہی ہیں تو حکمرانوں کو چاہئے کہ وہ سرائیکی وسیب کے محروموں کو ان کے حقوق دیکر ان خوشیوں کی خوشیوں کو دوبالا کریں ۔ انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخواہ کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے ہزارہ صوبے کی بات کی جبکہ سرائیکی صوبے کا نام لیتے ہوئے ان کے ہونٹ جلتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایبٹ آباد کے جلسے میں خیبرپختونخواہ کے وزیراعلیٰ کا یہ کہنا کہ ہم خیبرپختونخواہ اسمبلی میں ہزارہ صوبے کی قرارداد پیش کر رہے ہیں ۔ ہمیں اس سے غرض نہیں کہ وہ ہزارہ صوبہ بنائیں۔ لیکن ہم ان پر واضح کرتے ہیں کہ دیرہ اسماعیل خان اور ٹانک سرائیکی صوبے کا حصہ ہیں ، یہ کسی کے باپ کی جاگیر نہیں ۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف والوں کے دوہرے معیار ہیں ، عمران خان سرائیکی خطہ میں کہتے ہیں کہ لسانی بنیادوں پر صوبے نہیں بننے چاہئیں ۔ ہم ان سے پوچھتے ہیں کہ ہزارہ صوبہ لسانی بنیادوں پر نہیں تو کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے پہلے سرائیکی وسیب کے لوگوں کو بہاولپور جنوبی پنجاب ، ملتان اور سرائیکی صوبے کے نام پر لڑایا اب نئے اضلاع اور ڈویژنوں کے نام پر یہ لڑائیں گے ۔ سرائیکی وسیب کے جاگیردار سیاستدان ان چالوں کو سمجھنے کی کوشش کریں اور بھرپور طریقے سے ایک ہی مطالبہ کریں کہ ہمارا صوبہ بنایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب نے سرائیکی وسیب کے سکولوں کا فنڈ اپر پنجاب کو دیدیا ۔ حکمرانوں نے سرائیکی وسیب کے کالجوں میں جو چند ایک بسیں ہیں ان کا تیل بھی بند کر دیا ۔ جبکہ لاہور میں میٹرو بس پر اربوں خرچ کر کے ہر ماہ کروڑوں کی سبسڈی دی جا رہی ہے ۔ یہ ظلم نہیں تو اور کیا ہے ۔دریں اثناء اعجاز ابڑو کی قیادت میں خانپور سے آئے ہوئے وفد نے بھی سرائیکستان قومی کونسل کے رہنماؤں سے ملاقات کی 

0 comments

Write Down Your Responses