محکمہ سی اینڈڈبلیوضلع ڈیرہ اسماعیل خان کی ملکیت اراضی 39975کنال تین مرلے پرغیرقانونی قابضین کاانکشاف۔محکمہ اینٹی کرپشن ڈیرہ کوابتدائی تحقیقات میں انکشاف

ڈیرہ اسماعیل خان(سید توقیر زیدی سے)محکمہ سی اینڈڈبلیوضلع ڈیرہ اسماعیل خان کی ملکیت اراضی 39975کنال تین مرلے پرغیرقانونی قابضین کاانکشاف‘محکمہ اینٹی کرپشن نے تحقیقات شروع کردیں۔چیف سیکرٹری خیبرپختونخواہ ارباب شہزادکی خصوصی ہدایت پر صوبائی ڈائریکٹراینٹی کرپشن صوبہ خیبرپختونخواہ سیدفیاض علی شاہ نے اس بارے فوری تحقیقات کرنے کی ہدایت کی ہے۔اس سلسلہ میں محکمہ اینٹی کرپشن ڈیرہ کوابتدائی تحقیقات میں انکشاف ہواہے کہ محکمہ سی اینڈڈبلیوضلع ڈیرہ اسماعیل خان میں ہزاروں کنال اراضی لاکھوں روپے کے عوض مختلف موضع جات میں خریدکی گئی۔جس پراس وقت غیرمتعلقہ افرادقابض ہیں اورمختلف موضع جات میں اراضی کی خریدکی ہے۔موضع دھپ چپک میں20632کنال اراضی‘موضع مریالی اراضی1041کنال چودہ مرلے موجودہے۔یہ دونوں موضع جات ڈیرہ اسماعیل خان خیبرپختونخواہ میں واقع ہیں۔اس کے علاوہ موضع رحمان اراضی6266کنال‘موضع پہوڑاراضی8615کنال‘موضع مجوکہ اراضی 2257کنال‘موضع جھوک شاہ محمداراضی963کنال 9مرلے‘موضع کوٹلہ جام اراضی200کنال‘ اسی طرح کل اراضی 39975کنال تین مرلے جس میں خیبرپختونخواہ 21673کنال چودہ مرلے‘صوبہ پنجاب 18301کنال نومرلے بنتاہے۔تحقیقات سے سامنے آیاہے کہ محکمہ سی اینڈڈبلیوکے ذمہ داران کی ملی بھگت سے اس تمام اراضی پرغیرمتعلقہ لوگ قابض ہیں۔جوکہ لاکھوں روپے کی سالانہ فصلات وغیرہ غیرقانونی طورپرحاصل کررہے ہیں۔ہزاروں کنال اراضی پرغیرقانونی وغیرمعتلقہ افرادقابض ہیں جس سے حکومتی خزانے کونقصان پہنچ رہاہے۔محکمہ اینٹی کرپشن نے اس بارے تحقیقاتی ٹیم بھی تشکیل دیکرمتعلقہ ریکارڈقبضہ میں لیکرتحقیقات کاآغازکردیاہے۔

0 comments

Write Down Your Responses