میرپورخاص کمشنر آفیس کے سامنے بیٹھے ہوئے اسٹامپ وینڈر اور اوتھ کمشنر پچاس روپئے سے سو روپئے کے عیوض امیدواروں کے فارم فل کئے

میرپورخاص (ایم وی این نیوز ) سندھ بلدیاتی انتخابات کے نامینیشن فارم جمع کروانے کی آخری تاریخ گزر گئی لیکن حیرت کی بات یے ہے کہ سیکڑو کی تعداد میں ضلعے کونسل، ٹاؤن کمیٹی ، یونین کونسلز کے چئیرمن وائس چیرمن اور دیگر امیدواروں نے فارم بہترین اردو اور انگریزے میں لکھ کر جع کروائے ہیں ، لیکن ان امیدواروں کی حقیقت کچھ یہ ہے ، میرپورخاص کمشنر آفیس کے سامنے بیٹھے ہوئے اسٹامپ وینڈر اور اوتھ کمشنر پچاس روپئے سے سو روپئے کے عیوض امیدواروں کے فارم فل کئے اور حیرت کی بات یہ ہے کہ امیدواروں کے پاس ماسٹرز، گریجیوشن اور دیگر ڈگریاں موجود ہیں لیکن فارم خود نہیں بھر سکتے ۔۔ اسٹاپ وینڈر لیاقت علی خان نے ایوان صحافت کی ٹیم کو بتایا ۔کہ وہ فی فارم پر پچاس روپئے لے رہے ہیں اور فارم بھر کے دے رہے ہیں۔ایوان صحافت کی ٹیم کو دیکھنے کہ بعد کچھ امیدواروں نے اپنی ساکھ قائم رکھی اور بتایا ۔ کہ وہ بھی فارم بھر سکتے ہیں لیکن کوئی غلطی نہ ہو تو اسلئے اسٹاپ وینڈروں سے فارم بھروا رہے ہیں۔ سندھ کی عوام کی گراس روٹ لیول تک نمائندگی کرنے والے ان امیدواروں کی بھیڑ نے اپنے فارم جع کرا دئے ہے لیکن حقیقت کچھ الٹ ہے۔۔ واضع رہے کہ گزرشتہ جرنل الیکشن میں فارم جمع کروانے والے امیداروں میں جو کہ اس وقت ایم این اے ، ایم پی اے منتخب ہوچکے ہیں۔ انہوں نے اسلام کا پہلا رکن کلمہ طیب،، پاکستان کا طرانہ،،قرآن شریف مین سیپاروں کی تعداد سے تمام سوالوں کے جوابات رٹرننگ افسران کو جو دئے تھے وہ بھی ہمارے ناظرین نے دیکھا تھا۔۔اب یہ امیدار جو فارم کسی اور سے بھروا رہے ہیں وہ منتخب ہونے کے بعد ملک ، قوم اور اپنے علائقے کا کیا حشر کرینگے وہ تو وقت بتائے گا۔۔

0 comments

Write Down Your Responses