کینٹ پولیس نے کرامت اللہ مروت نامی تحصیلدارکے گھرپرہونیوالے دستی بم کے حملے کامقدمہ نامعلوم ملزمان کیخلاف درج کرلیا

ڈیرہ ا سماعیل خان(سید توقیر زیدی ) کینٹ پولیس نے کرامت اللہ مروت نامی تحصیلدارکے گھرپرہونیوالے دستی بم کے حملے کامقدمہ نامعلوم ملزمان کیخلاف درج کرلیا‘سابقہ لڑائی جھگڑے کے تنازعے پربندلوہارانوالہ پردوافرادکی اپنے مخالف کوڈرانے کیلئے ہوائی فائرنگ‘سٹی وکینٹ پولیس نے چارلاکھ روپے سے زائدکے دوجعلی چیکوں کامقدمہ درج کرلیا۔کڑی خیسورپولیس نے ایک شخص سے ناجائزاسلحہ برآمدکرلیا۔تفصیلات کے مطابق ڈیال روڈپرخیبرپبلک سکول کے قریب تحصیلدارکرامت اللہ مروت کے گھرپرگزشتہ رات ہونیوالے دستی بم کے حملے کامقدمہ کینٹ پولیس نے 51سالہ کرامت اللہ مروت کی مدعیت میں نامعلوم ملزمان کیخلاف 4/5Expپی پی سی کے تحت درج کرلیا۔دستی بم کے حملے کے دوران کرامت اللہ مروت کی بیٹھک میں گڑھاپڑگیاتاہم کسی قسم کاکوئی نقصان نہیں ہوا۔کرامت اللہ نے اپنی رپورٹ میں بتایاہے کہ مئی2013ء میں اسکے بھائی غنی الرحمن کوملازئی ٹانک سے نامعلوم ملزمان نے اغواء کیاتھا۔اوراب وہ مجھے بذریعہ فون دھمکیاں دے رہے ہیںیہ واقعہ بھی انہی ملزمان کی طرف سے ہوسکتاہے۔ تھانہ کینٹ میں بستی کانچکیانوالی کے رہائشی خرم شہزادبلوچ نے رپورٹ درج کرائی ہے کہ مدینہ کالونی کے رہائشی عدنان محمودولدسلطان محمودنے اسکوتین لاکھ روپے کاجعلی چیک دیاہے۔اسی طرح تھانہ سٹی میں ڈیال روڈکے رہائشی صفی اللہ مروت نے رپورٹ درج کرائی ہے کہ محلہ چمن چوک کے رہائشی عبدالغفارشاہدقریشی نے اسکوایک لاکھ روپے کاجعلی چیک دیاہے۔تھانہ کڑی خیسورکی حدودمیں بندلوہارانوالہ پرسابقہ لڑائی جھگڑے کے تنازعے پرارشداورشفیع نے صابرسکنہ کچی ملی خیل کوڈرانے کیلئے ہوائی فائرنگ کی ۔کڑی خیسورپولیس نے وسیم سکنہ خوشحاب سے دوران تلاشی ایک کلاشنکوف اورچودہ کارتوس برآمدکرلئے۔

0 comments

Write Down Your Responses