ڈیرہ اسماعیل خان سٹی پولیس نام نہاد درخوستوں کی آڑ میں عوام کو لوٹنے لگی

ڈیرہ اسماعیل خان(انوسٹی گیشن ٹیم) ڈیرہ اسماعیل خان سٹی پولیس نام نہاد درخوستوں کی آڑ میں عوام کو لوٹنے لگی سٹی پولیس نے وطیرہ بنا لیا ہے کہ کسی بھی شریف شہری کے خلاف درخواست لکھ کر پہلے اس شریف شہری کو تھانے بلا کر بلیک میل کرنے کی کوشش کی جاتی ہے اور جب شریف شہری پولیس کے ناخداوں سے یہ پوچھنے کی جرات کرتا ہے کہ اس یہ بتایا جائے کہ اس کے خلاف درخواست دینے والا کون ہے تو کہا جاتا ہے کہ اپ کون ہوتے ہیں ہم سے پوچھنے والے کہ اپ کے خلاف کسی نے درخواست دی ہے اور سٹی پولیس نے ان وارداتوں کے لیے ایک اے ایس ائی عبدالستار نامی مقر ر کیا ہوا ہے جو کسی سے پہلے درخواست لکھواتا ہے پھر کسی افیسر سے مارک کر واکر خود ہی انکوائری افیسر بن جاتا ہے اور جب بات نہ بنے اور کوئی شریف شہری اسکی جعلی درخواست کو ماننے سے انکار کرئے تو اس شریف شہری کی عزت کا اچھالنے کے لیے انکوائری کا نام لیکرپورے محلے میں غلیظ اور غلط باتیں کرکے اس شریف شہری کو خوب بدنام کرنے کی کوشش کرتا ہے تاکہ شریف شہری اپنی عزت اور بدنامی سے بچنے کے اس کا مطالبہ پورا کرئے جبکہ اس حوالے سے واضع قانون موجود ہے کہ کوئی بھی ادارہ ایسی کسی درخواست پر کاروائی کا حق نہیں رکھتا جس پر درخواست دہندہ اپنے اپ کو ظاہر نہ کرئے اور کسی شریف شہری کو بدنام کرنے کے لیے ایسی درخوستوں پر شریف شہریوں کو بلیک میل کرنے والے پولیس اہلکاروں کواداب ملازمت سکھانے کے لیے اپنے گھروں سے دور دیر یا چترال تبادلے کئے جائیں تاکہ شریف شہریوں کو حراساں کرنے کی یہ پھر کھبی جرات بھی نہ کریںیہ ایسے پولیس اہلکار محکمہ پولیس کے لیے سوا بدنامی اور رسوائی کے کچھ نہیں ہیں کیونکہ یہ سادہ لوح لوگوں کو افسران بالا کا نام لیکر بدنام کرتے ہیں عوامی سماجی حلقوں نے ڈی پی او نثار علی خان مروت اور ڈی آئی جی ڈیرہ عبدلغفور افریدی سے محکمہ میں موجود ایسی کالی بھیڑوں کے خلاف سخت ایکشن لیں تاکہ عوام کا پولیس پر اعتماد بحال ہو۔

0 comments

Write Down Your Responses