مقامی حکومتوں کے انتخابات عدلیہ کی نگرانی میں کرائے جائیں

لیاقت پور (انویسٹی گیشن ٹیم ) مقامی حکومتوں کے انتخابات عدلیہ کی نگرانی میں کرائے جائیں ،صوبائی حکومتوں کی طرف سے حلقہ بندیوں اور انتخابی فہرستوں میں من پسند ردو بدل جمہورریت کو ناکام کرنے کی کوشش ہے ان خیالات کا اظہار سنگت فاؤنڈیشن کے زیر نگرانی قائم حلقہ تعلقاتی گروپ (سی آر جی) این اے 192کے خصوصی اجلاس میں مقررین نے کیا اجلاس کی صدارت کنونےئر سی آر جی رانا افضل نذیر نے کی سنگت فاؤنڈیشن کے پروگرام آفیسرعظمیٰ احمدنے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ جمہوریت عوام اور ان کے منتخب نمائندوں کے درمیان ایک مسلسل اور تعمیری رابطے کا نام ہے شہری انتخابات میں اپنا ووٹ ڈال کر جمہوری عمل میں شریک ہوتے ہیں اور امیدوار الیکشن مہم میں ان سے ترقیاتی کاموں کے دعوے کرتے ہیں مگر جمہوری تقاضے ووٹ ڈالنے اور وعدوں سے کہیں زیادہ ہیں جس میں گورننس کی بہتری ایک اہم ایشو ز کو حل کرانے کی غرض پے ڈسٹرکٹ گورننس گروپ (ڈی جی جی) تشکیل دیا جا رہا ہے جس میں چاروں تحصیلوں سے ٹریڈ یونین ،سماجی تنظمیوں وتاجر تنظمیوں ،صحافیوں ،وکلاء ،ڈاکٹرز ،اساتذہ ،علماء ،طلبہ ،مذہبی اقلیتوں ،خواتین اور پسماندہ و محرومطبقات سے نمائندہ لوگوں کو شامل کیا جا رہا ہے وحید اسلم رشدی نے حالیہ مقامی حکومتوں کے انتخابات کے مراحل بارے تفصیلی اظہار خیال کیا اور کہا کہ مقامی ضلعی انتظامیہ کی زیر نگرانی ہونے والے یہ انتخابات کئی حوالوں سے اپنی شفافیت کھو رہے ہیں اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے ریاض عباسی ،ماسٹر عبدالستار ،نثار ،انور ندیم ،ممتاز حسین ،کشور ناز اور روبینہ انجم نے انتخابی مراحل پر عدم اطمینان کا اظہار کیا اجلاس میں ایک قرار دار کے ذریعے مطالبہ کیا گیا کہ مقامی حکومتوں کے انتخابات عدلیہ کی نگرانی میں کرائے جائیں میپکو کے میٹر ریڈروں کی طرف سے گھر بیٹھے زائد ریڈنگ ڈالنے کے مسلسل عمل کی روک تھام کی جائے ،میٹر بجلی کی خرابی کے بہانہ کی جانے والی لوٹ مار بند کی جائے اجلاس میں متفقہ طور پر ڈسٹرکٹ گورننس گروپ کے لیے وفاسلیم تسکین ،ریاض عباسی ،ممتاز حسین ،کشور ناز اور طارق ملک کو منتخب کیا گیا اس موقع پر ڈپٹی کنونےئر زرینہ بانو،ڈاکٹر عبدالرزاق ،حمیدہ جاوید ،نیم ناز ،نصیر فرخ ،جنید احمد وسیر ،سلمیٰ پروین ،مدثر رشید بھی شریک ہوئے۔

0 comments

Write Down Your Responses