وٹری کلب نے بین الاقوامی سطح پر پولیو کے خلاف جنگ میں ہر اول دستے کاکردار اداکیا

سرگودھا (بیورو رپورٹ) ڈی سی او سرگودہا طارق محمود نے کہاہے کہ روٹری کلب نے بین الاقوامی سطح پر پولیو کے خلاف جنگ میں ہر اول دستے کاکردار اداکیا ہے جس پر پوری قوم کو فخر ہے ۔پولیو کے خلاف کوششوں میں بین الاقوامی اداروں نے روٹری کے اس کردار کا برملا اعتراف کیا ہے ۔ انہوں نے یہ بات روٹری کلب کے ماہانہ اجلاس میں بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس کی صدارت روٹری کلب کے صدر مختار ا حمد مرزا نے کی ۔ ڈی سی او نے کہاکہ آج ہمیں اپنی سوچ کے زاویے بدلنے اور اپنے اندر خود احتسابی کی سوچ بیدار کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہم من حیث القوم غیر ذمہ دار اور فرائض سے کوتاہی کے مرتکب ہورہے ہیں ۔ روٹری کی انسانیت کی خدمت کیلئے گراں قدر خدمات ہیں۔ ایجوکیشن اور ہیلتھ پر توجہ دیکر ہم ملک کی ترقی کیلئے اہم کردارادا کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ پولیو کے خلاف جہاد وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کرنے والے افراد اپنی اولاد اور ملک وقوم سے مخلص نہیں ہیں۔خدانخواستہ کسی ایک بچے میں بھی پولیو کا وائرس آجاتاہے تو یہ ملک کی بھی بدنامی ہوتی ہے او راگر ہم ملک کو پولیو فری بنانے میں کامیاب نہیں ہو تے تو ہمارابیرونی دنیا سے رابطہ کٹ کر رہ جائے گا ۔ ڈی سی او نے روٹری کلب کی طرف سے فری ڈسپنسری اور دیگر فلاحی منصوبوں پر روٹری کلب کو مبارک باد دی ۔ قبل ازیں فیصل رزاق خواجہ نے روٹری کلب کے قیام او راغراض ومقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے بتایاکہ روٹری کلب کا وجود 23فروری 1905 کو عمل میں آیاجبکہ پاکستان میں یہ ادارہ 1958 میں قائم ہوا ۔ پوری دنیا میں اس وقت روٹری کے 32 ہزار کلب میں بارہ لاکھ ممبرز مقر ر ہو چکے ہیں ۔ یہ دنیا کی سب سے بڑی سروس آرگنائزیشن بن چکی ہے ۔ عبدالحمید وائیں نے بتایاکہ سرگودہا میں مخیر حضرات کے تعاون سے فری ڈسپنسری انسانیت کی خدمت میں اہم کردار ادا کر رہی ہے ۔ جہاں غریب او رمستحق افراد کے علاج اور آنکھوں کے معائنہ کیلئے جدید لیبارٹری قائم کی گئی ہے ۔ قبل ازیں صدر روٹری کلب نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور ڈی سی او کو روٹری کلب کی طرف سے پولیوکا امتیازی نشان کیپ (cap) او رایجوکیشن کے فروغ کیلئے بچوں کا بیگ پیش کیا 

0 comments

Write Down Your Responses