پسند کی شادی کا رنج درجنوں مسلح افراد مقامی کاشتکار کے دروازے اور دیواریں توڑ کر گھر گھس گئے

وہاڑی(انویسٹی گیشن ٹیم) پسند کی شادی کا رنج درجنوں مسلح افراد مقامی کاشتکار کے دروازے اور دیواریں توڑ کر گھر گھس گئے خواتین کو اغواء کرنے کی کوشش اندھا دھند فائرنگ مزاحمت پر خواتین کی بے حرمتی کرتے ہوئے خاتون سمیت تین افراد کی ٹانگیں توڑ اور بازو توڑ دیئے اہل علاقہ مردو خواتین کا واقعہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ملزمان گرفتار کرنے کا مطالبہ ، تفصیل کے مطابق نواحی گاؤں 70/12-Lکے رہائشی احمد یار ولد محمدنواز نے شبیر لنگٹریال ، فیض محمد ، غلام فرید ، ممتاز ، رفیق ، امجد ، فخری، عبداللطیف ، شیرزمان ، مشتاق احمد ، گلاں بی بی ، ارشاد مائی ، رضیہ ، سکھاں مائی ، صوفیہ ، مقبول احمد ، فیاض ، افضل ، سجاد ، اقبال ، اظہر ، جنت بی بی ، زہراں مائی ، زیباں اور سداں مائی وغیرہ سینکڑوں کے ہمراہ احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ ان کے عزیز بشیر احمد کے بیٹے غلام شبیر اور اسی گاؤں کے نور محمد بلوچ کی صاحبزادی ام کلثوم نے تقریباایک ماہ قبل گھر سے بھاگ کر پسند کی شادی کر لی اور فرار ہوگئے وہ غلام شبیر کی تلاش کررہے تھے کہ گذشتہ رات تقریباً 9بجے رات ام کلثوم کا والد نور محمد دیگر درجنوں افراد یوسف ، یعقوب ، فاروق ، غفقر ، مصطفی شوکت بلوچ ، عبداﷲ ریاض ، غلام بلوچ ، آصف عرف کالی ،عاشق ، منظور وغیرہ جو کہ مسلح آتشین اسلحہ تھے مرکزی گیٹ اور بیرونی دیوار توڑ کر ان کے گھر داخل ہوگئے اور اندھا دھند فائرنگ کر دی اور زبردستی زیباں بی بی کے لئے آگے بڑھا تو اسے بھی تشدد کا نشانہ بنایا جس سے اس کا بایاں کندھا اور بازو ٹوٹ گیا جبکہ جنت بی بی کی دائیں ٹانگ فریکچر ہوگئی اور زیباں ، زہراں کے کپڑے پھاڑ کر ملزمان نے انہیں برہنہ کر دیا خواتین نے ہمسایوں کے گھر بھاگ کر جان بچائی وہ کمرہ سے باہر نکلا تو ملزمان نے اسے پکڑنے کی کوشش کی وہ کمرہ میں گھس گیا تو انہوں نے دروازے پر سیدھی فائرنگ کر دی اہل علاقہ نے موقع پر پہنچ کر ملزمان کو گھر سے نکالا اور پولیس تھانہ شاہکوٹ اور ریسکیو 15کو اطلاع دی لیکن وہ وقوعہ سے تین گھنٹہ تاخیر سے پہنچے جائے وقوعہ سے درجنوں خالی گولیاں اور کارتوس کے خول قبضہ میں لئے جنت بی بی کو شدید زخمی حالت میں سول ہسپتال چیچہ وطنی داخل کرادیا گیا ہے ملزمان بااثر ہیں جس وجہ سے پولیس کاروائی سے گریزاں ہے مظاہرین نے ڈی پی او ساہیوال اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے انصاف کی اپیل کی ہے

0 comments

Write Down Your Responses