ضلع میں جبری مشقت کے خاتمے اور ورکرؤں کی کم از کم تنخواہ 10ہزارروپے کی فراہمی یقینی بنائی جاء : ‘ڈی سی او لودھراں خالد سلیم

لودھراں ( انویسٹی گیشن ٹیم) ڈی سی او خالد سلیم نے کہا ہے کہ ضلع میں جبری مشقت کے خاتمے اور ورکروں کی کم از کم تنخواہ 10ہزار روپے کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ضلع کے تما م بھٹہ جات، فیکٹریوں اورملوں کی تعداد، وہاں موجود ورکروں اور ان کی مکمل رجسٹریشن کا ریکارڈ مرتب کیا جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جبری مشقت کے خاتمے اور ورکرؤں کو سہولیات کی فراہمی کے سلسلے میں اجلا س کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اے ڈی سی واجد علی شاہ سمیت ڈی ایس پی صد شرافت علی ، ڈسٹرکٹ آفیسر لیبر اور دیگر متعلقہ محکمہ جات کے آفیسرا ن اس موقع پر موجود تھے۔ ڈی سی او خالد سلیم نے کہا کہ ضلع بھر میں ورکرؤں کو سہولیات کی فراہمی یقینی ہونی چاہیے۔ انہوں نے محکمہ لیبر کے آفیسرا ن کو ہدایت کی کہ وہ بھٹہ جات ، فیکٹریوں اور ملوں کا وزٹ کریں اور اگلے اجلاس میں مکمل تفصیل سے آگاہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری فرائض کی سرانجام دہی میں جہاں کہیں پولیس کی مدد کی ضرورت ہو گی وہ بھی فراہم کی جائیگی۔ انہوں نے کہا کہ قواعد و ضوابط کے مطابق فرائض کی ادائیگی کی جائے اور اس سلسلے میں کوتاہی اور غفلت پر پوچھ گچھ بھی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ جہاں کہیں بھی جبری مشقت یا ورکرؤں کے معاوضے بارے شکایت ملے فوری طور پر ایکشن لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ورکرؤں کی سہولیات کیلئے سوشل سیکورٹی ڈسپنسری سمیت دیگر وظائف اور سہولیات بارے ورکرؤں کوآگاہ کیا جائے اور انکی کی رجسٹریشن اور سوشل سیکورٹی کارڈ ؤں کی فراہمی میں ہرگز تاخیر نہ کی جائے۔ اجلاس میں ڈی سی ا و نے محکمہ سوشل سیکورٹی اور محکمہ لیبر کے افسران کو آپس میں اعدادو شمار کی درستگی کی بھی ہدایت کی

0 comments

Write Down Your Responses