سابق ڈی سی او بہاولپور ڈاکٹر نعیم رؤف کے خلاف گورنمنٹ سرونٹ END سروسز رولز سیکشن 9کے تحت کاروائی شروع

بہاول پور ( ڈپٹی انویسٹی گیشن انچارج سیل ) کیبنٹ ڈویژن اسلام آباد نے سابق ڈی سی او بہاولپور ڈاکٹر نعیم رؤف کے خلاف گورنمنٹ سرونٹ END سروسز رولز سیکشن 9کے تحت کاروائی شروع کردی چیف سیکریٹری پنجاب کے نام مراسلہ میں کہا گیا ہے کہ وفاقی حکومت سابق ڈی سی او بہاولپور کے خلاف گورنمنٹ سرونٹ ENDرولز سیکشن 9کے تحت ڈسپلنری پروسیڈنگ شروع کر رہی ہے لہٰذا ان پر لگائے گئے تمام الزامات کی مکمل رپورٹ پیش کی جائے سابق ڈی سی او بہاولپور نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے سابق 5سالہ دور حکومت میں 4سال تک کھلے عام کرپشن کی انہوں نے اپنی اہلیہ کو کنواری ظاہر کرتے ہوئے چک نمبر64/DBتحصیل یزمان میں کروڑوں روپے مالیت کی اراضی خرید کی اراضی کی خریداری کی دستاویزات میں صرف 16لاکھ روپے میں خریداری ظاہر کی گئی ان کے دور میں اربوں روپے ترقیاتی سکیموں کے نام پر دیئے گئے محض کاغزات میں سکیمیں چالو کی گئیں لیکن عملی طور پر بہاولپور کے شہری پینے کے صاف پانی اور دیگر بنیادی سہوتوں سے محروم ہیں دانش سکول حاصل پور کی تعمیر اور سامان کی خریداری میں خلاف قانون رولز ریگولیشن کی خلاف ورزی کرتے ہوئے منظور نظر ٹھیکیداروں اور کنسلٹنٹ فرم کو کروڑوں روپے کی اضافی ادائیگیاں کی گئیں دانش سکول کی تعمیر کیلئے ایگریمنٹ کیخلاف ورزی کرتے ہوئے میٹریل کے استعمال سے پچاس کروڑ روپے سے زائد رقم کا نقصان پہنچایا گیا اگرچہ چیئرمین نیب اسلام آباد کی خدمت میں دانش سکول حاصل پور چشتیاں اور رحیم یار خان کی تعمیر کے سلسلے میں تقریباً ڈیڑھ ارب روپے کی رولز ریگولیشن کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ادائیگیاں کرنے پر درخواست دی گئی ہے لیکن تا حال نیب کی جانب سے کوئی قابل ذکر کاروائی نہیں کی گئی سابق ڈی سی او نے اربوں روپے مالیت کی سرکاری اراضی پر لینڈ مافیا کے ذریعے قبضہ کروائے اور سرکاری اراضی پر متعدد ہاؤسنگ کالونیاں اور ٹاؤن بنادیئے گئے پنجاب بھر میں ڈاکٹر نعیم رؤف طویل عرصہ تعینات رہنے کی وجہ سے طاقتور اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے قریب تصور کئے جاتے تھے ان کے خلاف میڈیا سمیت کسی بڑے سے بڑے سیاستدان کو زبان کھولنے کی جرائت نہیں ہوتی تھی مقامی صحافی غلام رسول خان نمائندہ این این آئی اسلام آباد نے انکی کرپشن بے نقاب کی تو مقامی پولیس کی مدد سے متعدد جھوٹے مقدمات میں ملوث کردیا اور جب مقدمات میں ضمانت ہوگئی تو اپنے انتقام کی آگ ٹھنڈی کرنے کیلئے 30یوم کیلئے نیو سنٹرل جیل بہاولپور میں قید کروادیا گیا لاہور ہائی کورٹ بنچ بہاولپور میں غلام رسول خان کی نظر بندی چیلنج کی گئی تو مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے رٹ پٹیشن کی سماعت کرتے ہوئے ڈیٹنشن آڈر میں لگائے گئے الزامات کا ثبوت طلب کیا مگر سابق ڈی سی او اور سابق ڈی پی او بابر بخت قریشی ثبوت فراہم نہ کر سکے تو ہائی کورٹ کے حکم پر صحافی غلام رسول خان کو رہائی ملی مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے غیر قانونی آڈر جاری کرنے پر ڈی سی او ڈاکٹر نعیم رؤف کو اپنی جیب سے 50ہزار روپے جرمانہ ادا کرنے کا حکم فرمایا مگر ڈی سی او کی جانب سے انڈر ٹیکنگ دینے پر جرمانہ کی رقم معاف کردی گئی ہائی کورٹ کی جانب سے جرمانہ کی سزا اور ڈی سی او ڈاکٹر نعیم رؤف کے خلاف فیصلہ PLD 2012 PAGE 336 بحوالہ رٹ پٹیشن لیاقت علی خان بنام ڈی سی او وغیرہ قانون کا حصہ بن چکا ہے۔

0 comments

Write Down Your Responses