’’ساڈے ہندیاں موجاں کرو‘‘

چنیوٹ (چیف انویسٹی گیشن) ’’ساڈے ہندیاں موجاں کرو‘‘ ٹریفک پولیس چنیوٹ ناجائز غیر قانونی ویگن ،رکشہ اور بس اسٹینڈز کی سرپرست بن گئی جگہ جگہ غیر قانونی ویگن ،بس،اور رکشہ اسٹینڈز قائم ہوگئے جبکہ متعلقہ ٹریفک انچارج اور دیگر عملہ فی پھیرا اپنا نذرانہ وصول کر رہا ہے ۔تفصیلات کے مطابق چنیوٹ ختم نبوت چوک میں جگہ جگہ گیر قانونی اسٹینڈز قائم ہو گئے ہیں اور ٹریفک پولیس کے جوانوں نے ام سے اپنی فی پھیرا کمیشن بھی طے کر لی ہے جبکہ ان گیر قانونی اسٹینڈز کی وجہ سے شہریوں ودیگر ٹریفک و راہگیروں کو گزرنے میں شدید مشکالات کا سامنا ہے اس سلسلہ میں کیے جانے والے سروے میں عوامی ،سماجی،رفاحی و دیگر حلقوں کا کہنا ہے کہ اس وقت ضلع چنیوٹ کی ٹریفک کا سسٹم مکمل طور پر تباہ برباد ہو چکا ہے ۔جس کی بنیادی وجہ اعلیٰ حکام کی عدم دلچسپی بتائی گئی ہے ۔عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ٹریفک پولیس چنیوٹ جان بوجھ کر شہریوں کے لیے عذاب بنی ہوئی ہے پورے شہر کے مختلف پوائنٹس پر دیوٹیاں سر اانجام دینے والے اہلکار دکھائی نہیں دیتے جبکہ ٹریفک کا ں طام بے یارومددگار اپنی مدد آپ کے تحت چلتا رہتا ہے البتہ چنیوٹ ٹریفک پولیس نے ٹرانسپورٹروں سے گٹھ جوڑ کرکے غیر قانونی اڈوں کی پشت پناہی شروع کر دی ہے جہاں اوور لوڈنگ اور اوور چارجنگ کا جن عوام اور مسافروں پر مسلط کر دیا گیا ہے اور اس کمائی کا ایک حصہ خود ٹریفک پولیس وصول کرتی ہے جبکہ دوسری جانب یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ اس کمائی سے اوپر براجمان افسران کو بھی انکا حصہ پہنچایا جاتا ہے اور مذکورہ ٹرانسپورٹر مہینے میں دو چار بار متعلقہ حکام و افیسران کے گھروں میں تحفے تحائف بھی بھجوا دیتے ہیں تاکہ تعلقات میں مزید مضبوطی آسکے مگر اس سارے نظام کا خمیازہ عوام کو بھگتنا پڑ رہاہے چنیوٹ کی عوام نے ڈی آئی جی ٹریفک پنجاب ،خادم اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع چنیوٹ میں ٹریفک وارڈنز سسٹم کو لایا جائے تا کہ کھلم کھلی کرپشن کا جن بوتل میں بند ہو سکے اور عوام پڑھے لکھے با اخلاق اور قانونی دائرہ کار کے افسران سے استفادہ حاصل کر سکیں۔

0 comments

Write Down Your Responses