صوبائی محکمہ صحت نے یوم عاشور تک کراچی سمیت تمام سرکاری اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ

کراچی(انویسٹی گیشن ٹیم)  محرم الحرام پر شہر میں چوری و چھینی گئیں گاڑیوں اور ایمبولینسوں کے ذریعے دہشت گردی کا ممکنہ خطرے کے پیش نظر آئی جی سندھ نے چوری و چھینی گئی گاڑیوں اور ایمبولینسوں پر کڑی نظر رکھنے اور سیکیورٹی اقدامات کو مزید سخت کرنے کی ہدایت جاری کردیں۔
ادھر صوبائی محکمہ صحت نے یوم عاشور تک کراچی سمیت تمام سرکاری اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے اسپتالوں کے انتظامی سربراہوں کوہدایت کی ہے کہ9اور10محرم کی شب تک اسپتالوں میں ڈاکٹروں اورعملے کی ڈیوٹیاں یقینی بنائی جائے اور شہر میں کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی صورت میں سرکاری اسپتالوں میں ادویات کی دستیابی کو بھی یقینی بنایاجائے، مرکزی پولیس دفتر سے جاری اعلامیے کے مطابق آئی جی سندھ شاہد ندیم بلوچ نے ہدایات جاری کی ہیں کہ امن امان کی صورتحال اور ممکنہ دہشت گردی کے خطرات کو مد نظر رکھتے ہوئے چوری و چھینی گئی تمام گاڑیوں با الخصوص ایمبولنس کی برآمدگی اور ملوث گروہوں کی بیخ کنی کے لیے ترتیب دیے گئے لائحہ عمل پر نہ صرف عمل درآمد یقینی بنایا جائے ۔
بلکہ ان اقدامات کو محرم کنٹی جنسی پلان کا بھی حصہ بناتے ہوئے تمام جلوسوں میں اسٹیکر اور خصوصی اجازت ناموں کی حامل گاڑیوں کو باقاعدہ تلاشی کے بعد ہی شامل ہونے دیا جائے، بغیر اسٹیکر کی کسی بھی گاڑیوں کو جلوس میں شرکت کی ہر گز اجازت نہ دی جائے، انھوں نے پولیس کو مزید ہدایات جاری کیں کہ چوری و چھینی گئی تمام گاڑیوں کی فہرستیں ترتیب دیکر ان کی فوری برآمدگی کے لیے تھانہ پولیس اور اینٹی کار لفٹنگ سیل کے ذریعے جملہ اقدامات کو مزید موثر بنایا جائے اور اس ضمن میں جلوسوں مجالس ، امام بار گاہوں و مساجد کے اطراف میں اسنیپ چیکنگ کے لیے اینٹی کارلفٹنگ سیل کی خصوصی ٹیمیں تشکیل دی جائے جو متعلقہ تھانوں سے باقاعدہ رابطے میں رہتے ہوئے چھینی گئی و چوری شدہ گاڑیوں کی برآمدگی کے لیے تمام تر اقدامات کو یقینی بنائیں گے۔

انھوں نے کہا کہ چھینی گئی و چوری ہونے والی گاڑیوں کی رپورٹ موصول ہوتے ہی تھانہ جات مرکزی کنٹرول روم پر نوٹ کروائیں گے اور فوری طور پر باقاعدہ ٹیمیں تشکیل دیگر وہیں تھانہ جات کو فوری حرکت میں لائے کے لیے ایسی تمام گاڑیوں کے حوالے سے اطلاع وی ایچ ایف کنٹرول پر بھی نوٹ کرائی جائے، انھوں نے کہ نیشنل ہائی وے، سپر ہائی وے ، نادرن بائی پاس حب ریور روڈ ، مائی کلاچی، سے اندرون سندھ ، بلوچستان ، اوباڑو ، کشمور، جیکب آباد سے پنجاب جانے والے راستوں پر کڑی نگرانی کے نظام کو سخت اور موثر بنایا جائے، علاوہ ازیں صوبائی محکمہ صحت نے یوم عاشور تک کراچی سمیت تمام سرکاری اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے اسپتالوں کے انتظامی سربراہوں کوہدایت کی ہے کہ9اور10محرم کی شب تک اسپتالوں میں ڈاکٹروں اورعملے کی ڈیوٹیوں کو یقینی بنایا جائے اور شہر میں کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی صورت میں سرکاری اسپتالوں میں ادویات کی دستیابی کو بھی یقینی بنایاجائے ۔
محکمہ صحت کی جانب سے جاری حکم میں کہاگیا ہے ،جناح اسپتال، سول اسپتال سمیت دیگر اسپتالوں وبلدیہ کے زیر انتظام چلنے والے اسپتالوں میں بھی یوم عاشور تک ایمرجنسی برقرار رہے گی، یوم عاشورکے موقع پر عزاداروں کے ماتمی جلوسوں میں عزاداروں کو بروقت اور فوری طبی امدادکی فراہمی کیلیے سرکاری اسپتالوں میں فوری طبی امداد کی فراہمی اورمختلف مقامات میں میڈیکل کیمپ بھی قائم کرنے کی ہدایت دی ہے، ای ڈی اوہیلتھ کراچی ڈاکٹر ظفر اعجاز نے بتایا کہ کراچی کے 18ٹاؤنز میں قائم صحت کے بنیادی مراکز اور اسپتالوں میں بھی ایمرجنسی نافذکردی گئی جبکہ بلدیہ عظمی کے افسر کے مطابق عباسی اسپتال سمیت دیگر اسپتالوںمیں یوم عاشور تک ایمرجنسی بدستور برقرار رہے گی۔



0 comments

Write Down Your Responses