انسداد پولیو مہم میں سو فیصد ٹارگٹ کے حصول کے لئے ڈی سی اونے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے استعمال کا حکم دیا

فیصل آباد (چیف انویسٹی گیشن) ڈی سی او نورالامین مینگل نے انسداد پولیو مہم میں سو فیصد ٹارگٹ کے حصول کے لئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے استعمال کا حکم دیا ہے جس کے تحت ضلع میں تمام بچوں کے ڈیٹا کو مرتب کرکے ان کو حفاظتی ٹیکے لگانے کا ریکارڈ چیک کیا جائے اور ویکسین سے محروم رہنے والے بچوں کی کمپیوٹر کے ذریعے فوری نشاندہی کی جائے ۔ انہوں نے یہ حکم ضلعی انسداد پولیو کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے آئندہ انسداد پولیو مہم کے انتظامات کا جائزہ لیتے ہوئے جاری کیا جو 18 سے 20 نومبر تک شروع ہو رہی ہے ۔ ڈی سی او نے تمام متعلقہ محکموں کے سٹاف سے کہا کہ انسداد پولیو مہم پر انتہائی سنجیدگی سے عملدرآمد کیا جائے اس سلسلے میں والدین کی آگاہی کے لئے موثر اور وسیع آگہی مہم شروع کریں ۔ انہوں نے ضلع کے تمام سرکاری وغیر سرکاری سکولوں کے گیٹس سمیت اہم مقامات پر بینرز ؍ سٹیمرز آویزاں کرنے ‘ موبائل فون کمپنیز کے ذریعے لوگوں تک پیغام پہنچانے اور مساجد کے لاؤڈ سپیکرز کے ذریعے اعلانات کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ انسداد پولیو کے موضوع پر پرائیویٹ اور سرکاری سکولوں کے طلبا کے مابین تقریری مقابلوں اور کھیلوں کا اہتمام کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ شہر کے مختلف چوکوں میں پولیو آگاہی کیمپ لگا کر وارڈنزکے ذریعے معلوماتی پمفلٹس تقسیم کرانے کے علاوہ تمام مسافر ٹرانسپورٹ اڈوں ‘ پرائیویٹ ہسپتالوں ‘ ریلوے اسٹیشن اور موٹر وے انٹر چینج پر نمایاں پولیو ویکسین کیمپ لگائے جائیں جبکہ پولیو سٹاف کو متوجہ کرنے والے رنگ کی خصوصی جیکٹس پہنائی جائیں تاکہ ان کی واضح شناخت ہو ۔ڈی سی او نے ای ڈی او ایجوکیشن سے کہا کہ وہ تمام پرائیویٹ اور سرکاری سکولوں کو سرکلر جاری کریں کہ حفاظتی ٹیکوں کے کارڈ کے بغیر کسی بچے کا داخلہ نہ کیا جائے جبکہ یونین کونسلز کے سیکرٹریز ابتدائی ویکسین سے محروم بچوں کی پیدائش کا اندراج نہ کریں ۔ انہوں نے کہا کہ انسداد پولیو مہم کے دوران تھانہ کے ایس ایچ اوز اپنے علاقے میں گشت کرکے حفاظتی نقطہ نظر سے ٹیموں کی نگرانی کریں جبکہ اسسٹنٹ کمشنر اپنی تحصیلوں کی انسداد پولیو مہم کی مانیٹرنگ کریں گے ۔ ڈی سی او نے تمام متعلقہ محکموں کو مربوط انداز میں انسداد پولیو مہم کو کامیاب بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے خبردار کیا کہ غیر ذمہ داری اور غفلت شعار سٹاف کو برداشت نہیں کیا جائے گا ۔اجلاس کے دوران ای ڈی ہیلتھ ڈاکٹر وقار صادق اور ڈی او ہیلتھ ڈاکٹر لیاقت علی نے بریفنگ کے دوران بتایا کہ سہ روزہ مہم کے دوران پانچ سال تک کی عمر کے گیارہ لاکھ 88 ہزار بچوں کو پولیو ویکسین قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے جس کے لئے ضلعی محکمہ صحت نے مجموعی طور پر 2755 ٹیمیں تشکیل دی ہیں جن میں 2240 ٹیمیں گھر گھر جا کر بچوں کو ویکسین پلائیں گی ۔ انہوں نے بتایا کہ مہم کی نگرانی کے لئے 458 ایریا انچارجز اور 289 یونین کونسل مانیٹرنگ آفیسر مقرر کئے گئے ہیں ۔

0 comments

Write Down Your Responses