وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کے خصوصی پیکج کے تحت ضلع کی تمام تحصیلوں میں کروڑوں روپے کے ترقیاتی منصوبے جلد شروع کئے جائیں گے

رحیم یار خان(انچارج انویسٹی گیشن سیل ) سینیٹر چوہدری محمد جعفر اقبال سینئر نائب صدر مسلم لیگ(ن) پنجاب نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کے خصوصی پیکج کے تحت ضلع کی تمام تحصیلوں میں کروڑوں روپے کے ترقیاتی منصوبے جلد شروع کئے جائیں گے جن کی تکمیل سے ہر علاقے کے عوام جدید بنیادی سہولیات سے مستفید ہو سکیں گے وہ ڈی سی او آفس میں ترقیاتی سکیمیوں کے سپیشل پیکج،جنوبی پنجاب ترقیاتی پروگرام اور ضلعی ترقیاتی پروگرام کے تحت ترقیاتی منصوبوں کے جائزہ اجلا س سے خطاب کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ کرپشن اور سرکاری فنڈز کا غبن یا ضیاع موجودہ حکومت کے لئے ناقابل برداشت فعل ہے جس کی ہر سخت ترین اقدام کے ذریعے حوصلہ شکنی ہونی چاہیے۔چوہدری جعفر اقبال نے کہا کہ فلاح عامہ کے تمام منصوبوں پر شفافیت کو یقینی بنایا جائے اور حکومت کی جانب سے فراہم کردہ فنڈز کی ایک ایک پائی عوامی مسائل کے خاتمہ اور ضلع کی تعمیر و ترقی پر خرچ کی جائے۔اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے ای ڈی او فنانس اینڈ پلاننگ ظہور حسین گجر نے بتایا کہ ضلع بھر میں70کروڑ روپے کی رقم سے سڑکوں کا جال بچھایا جائے گا۔جنوبی پنجاب ترقیاتی فنڈز کے62کروڑ30لاکھ روپے سے ضلع میں میگا پروجیکٹ سمیت دو گرلز کالج کی تعمیر جبکہ اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کے 90کروڑ روپے کے فنڈز سے ضلع کی تعمیر و ترقی میں واضح تبدیلی ہو گی۔بریفنگ میں بتایا گیا کہ حکومت پنجاب کی جانب سے موصول ہونے والے70کروڑ روپے سے ضلع بھر میں سڑکوں کا جال بچھایا جائے گا اور سڑکوں کی تعمیر و مرمت بھی کی جائے گی۔انہوں نے بتایا کہ ضلع رحیم یار خان کو جنوبی پنجاب ترقیاتی فنڈز سے 62کروڑ 30لاکھ روپے کی رقم سے میگا پراجیکٹ پر کام کیا جائے گا جن میں سڑکوں کی تعمیر، تعلیم ،صحت، واٹر سپلائی، سیوریج اور دیگر منصوبے سمیت دو گرلز کالج کی تعمیر شامل ہے۔انہوں نے بتایا کہ اراکین اسمبلی ان منصوبوں کی نشاندہی کریں گے جن کی منظوری کے بعد ان پر کام کا آغاز ہو گا۔ای ڈی او فنانس نے بتایا کہ ا راکین قومی و صوبائی اسمبلی کے ترقیاتی فنڈز کی مد میں بھی حکومت پنجاب نے90کروڑ روپے کی رقم مختص کی ہے جس پر ان کے منظور کر دہ ترقیاتی منصوبوں پر تیزی سے کام شروع کیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ ان منصوبوں کی تکمیل سے ضلع میں تعمیر و ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز ہو گا۔

0 comments

Write Down Your Responses