چنیوٹ میں ترقیاتی کاموں کی آڑ میں کرپشن کا نظام چل رہا ہے

چنیوٹ (چیف انویسٹی گیشن) چنیوٹ میں ترقیاتی کاموں کی آڑ میں کرپشن کا نظام چل رہا ہے اور ہر کوئی کرپشن کی اس بہتی گنگا میں ہاتھ دھونے میں لگا ہوا ہے عہدوں کا ناجائز فائدہ اُ ٹھاتے ہوئے بڑے پیمانے پر کرپشن کا بازار گرم کیا گیا ہے اور عوامی ترقیاتی کاموں کی آڑ میں کمیشن مافیاء اور تاؤٹ لمبی لمبی دیہاڑیاں لگانے میں مصروف ہیں پبلک ہیلتھ انجیئرنگ کے تحت 20کروڑوں روپے سے تعمیر ہونے والی سیوریج میں ناقص میٹریل استعمال کیاجارہا ہے ان خیالات کا اظہارمرکزی تنظیم تاجران کے ضلعی صدر چوہدری امجد علی اور سٹی صدر مسلم لیگ (ن )چوہدری محبوب عالم بھولا نے میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں ایکس سی این پبلک ہیلتھ کوبھی ایک درخواست دے دی گئی ہے ۔جس میں اس بات کو واضح کیا گیا ہے کہ پورے شہر میں ڈالے جانے والے اس سیوریج کے نظام میں پائپ،سریا،سیمنٹ انتہائی ناقص کوالٹی کا دالا جارہا ہے جبکہ ہودیاں ،ڈسپوزل ورکس بیسمنٹ میں ڈالی جانے والی کنکریٹ نہ ہونے کے برابر ہے اور اس پروجیکٹ پر کئی ماہ سے فنڈز نہ ہونے کا ڈرامہ کرکے کام ٹھپ کیا جا چکا ہے جس کی سزا چنیوٹ کے درجنوں علاقوں کے مکین گندے پانی میں زیر آب آکر بھگت رہے ہیں جس کے باعث مختلف موذی امراض بھی جنم لے چکی ہیں اور عوام دھیرے دھیرے ان کا شکار ہو رہیں انہوں نے بتایا کہ سیوریج سسٹم کا کام ٹھپ ہوجانے سے ہزاروں افراد متاثر ہورہے ہیں 

0 comments

Write Down Your Responses