اگر لویہ جرگے میں شامل افراد نے امریکا سے قومی سلامتی سے متعلق کوئی معاہدہ کیا تو اس کے سنگین برآمد ہوں گے۔

کابل(انویسٹی گیشن ٹیم) افغان طالبان نے دھمکی دی ہے کہ اگر لویہ جرگے میں شامل افراد نے امریکا سے قومی سلامتی سے متعلق کوئی معاہدہ کیا تو اس کے سنگین برآمد ہوں گے۔
افغان طالبان کی جانب سے جاری ایک بیان میں لویہ جرگہ کے تمام اراکین کو خبر دار کیا گیا ہے کہ میں امریکی افواج کے انخلا کے بعد اگر امریکا کو ملک میں روکنے کے حوالے سے کسی قسم کا معاہدہ کیا گیا تو اس  پر دستخط کرنے والے ہر رکن  کو نشانہ بنایا جائے گا۔
>قبائلی عمائدین اورحکومتی رہنماؤں پر مشتمل لویہ جرگہ 19 سے 21 نومبر تک منعقد کیا جائے گا اور اگر لویہ جرگہ اس معاہدے پر دستخط کر دیتا ہے تو پھر اس معاہدے کو منظوری کے لئے پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا جس کے مطابق تقریبا 5 ہزار سے 10 ہزار امریکی فوجی 2014 کے بعد بھی افغانستان میں قیام کر سکیں گے جنھیں خصوصی اختیارات حاصل ہوں گے۔
واضح رہے کہ گزشتہ ماہ امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے اپنے دورہ افغا نستان کے دوران امریکی افواج کے افغانستان میں قیام کے لئے افغان قوانین سے ماورا خصوصی اختیارات کا مطالبہ کیا تھا جس پر افغان صدر حامد کرزئی کا کہنا تھا کہ امریکی افواج کو خصوصی اختیارات دینے کا اختیار لویہ جرگہ کے پاس ہے۔

0 comments

Write Down Your Responses