پنچایت نے پسند کی شادی کرنیوالوں کی زبردستی طلاق کرا دی

ملتان(ایم وی این نیوز) تھانہ مظفر آباد کے علاقے میں پنچایت نے پسند کی شادی کرنے والوں کی گن پوائنٹ پر طلاق کرا دی،پولیس نے لڑکی کے خاندان کے 3افراد کو گرفتار کر لیا، مظفر آباد کے رہائشی عدنان اور عظمیٰ نے پولیس تھانہ مظفر آباد کو آگاہ کیا کہ انہوں نے پسند کی شادی کی تھی ان کے خاندان والوں نے پنچایت کی جس میں ان کی طلاق کا فیصلہ ہوا ، پنچایت نے زبردستی ان کی طلاق کروا دی،جب انہوں نے احتجاج کیا تو اسلحہ نکال لیا ، اب دوبارہ رجوع کرنے پر قتل کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں ، انہوں نے کہا کہ ہم ساتھ رہنا چاہتے ہیں ،حکومت ہمیں تحفظ فراہم کرے ۔
دوسری طرف سی پی او ملتان چوہدری سلیم نے اس واقعہ پر پنچایت کے خلاف کاروائی کا حکم دے دیا، انہوں نے کہا کہ عدنان اور عظمیٰ کو پولیس تحفظ دے گی،مقدمہ درج کیا جا رہا ہے اس لئے دونوں کو تھانے بلایا گیا ہے تاکہ وہ ملزمان کی نشاندہی کریں ملزمان کو آج ہی گرفتار کر لیا جائے گا ، انہوں کہا کہ پنچایتی نظام میں کسی کے ساتھ زیادتی نہیں ہونے دی جائے گی۔پولیس تھانہ مخدوم رشید نے سی پی او ملتان کے حکم پر لڑکی کے خاندان کے پانچ افراد کےخلاف مقدمہ درج کرکے تین کو گرفتار کر لیا،پولیس کے مطابق لڑکی عظمیٰ بی بی کا گھر18کسی ہے جہاں پر مظفرآباد کےرہائشی عدنان کوبلایا گیا اورگھرمیں سید طاہرعباس، الیاس، فیصل شاہ اورجاویدشاہ اورارشادبی بی نے گن پوائنٹ پرعدنان سے طلاق لکھوائی،پولیس نے معاملے کی چھان بین شروع کردی ہے۔

,

0 comments

Write Down Your Responses