داعش کو کونسا ملک ایٹم بم بیچ رہا ہے

واشنگٹن(ایم وی این نیوز) شمالی کوریا کے ایٹمی ہتھیار اب تک تو صرف جنوبی کوریا اور امریکہ کیلئے ہی خطرہ تھے لیکن حال ہی میں یہ لرزہ خیز انکشاف سامنے آیا ہے کہ یہ ملک اپنے ایٹمی ہتھیار شدت پسند تنظیم داعش کو بھی فروخت کرسکتا ہے۔  شمالی کوریا پر امریکہ اور اقوام متحدہ کی سخت ترین پابندیوں نے اسے مجبور کردیا ہے کہ رقم کے حصول کیلئے جو بھی طریقہ ممکن ہو استعمال کرلیا جائے۔ سب سے بڑا خطرہ یہ ہے کہ اقتصادی پابندیوں سے نمٹنے کیلئے یہ ملک داعش اور القاعدہ جیسی تنظیموں کو ایٹمی ہتھیار فروخت کرسکتا ہے۔شدت پسندی پر نظر رکھنے والے تحقیقاتی ادارے کلیرین کا کہنا ہے کہ ”اس سے پہلے شمالی کوریا شدت پسند گروپوں کو کروڑوں ڈالر کے ہتھیار، میزائل اور بم فروخت کرچکا ہے۔ شمالی کوریا پر عائد کی جانے والی نئی پابندیوں کے بعد ہم توقع کرسکتے ہیں کہ اسلحے کی غیر قانونی فروخت میں اضافہ ہوگا۔ کسی بھی شدت پسند گروپ کی شمالی کوریا کے ساتھ دشمنی نہیں ہے لہٰذا اسے شدت پسند گروپوں کو ہر قسم کا اسلحہ فروخت کرنے میں کوئی ہچکچاہٹ نہیں ہوگی۔ دوسری جانب وہ تمام ممالک ایٹمی حملے کے خطرے سے دوچار ہوں گے جہاں داعش اپنی کاروائیوں میں مصروف ہے۔“

,

0 comments

Write Down Your Responses