سیاسی قیادت پارلیمنٹ کا اختیار سپریم کورٹ کو نہ دے

پشاور (ایم وی این نیوز)عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی نے کہا ہے کہ سیاسی قیادت سے درخواست ہے خدارا پارلیمنٹ کے اختیارات سپریم کورٹ کو نہ دیں ،اگر ایساہو گیا تو قومی اسمبلی کی افادیت ختم ہو جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اے این پی جمہوریل کے لیے کوشش کرتی رہے گی ،جمہوریت کو کسی صورت بھی ڈی ریل ہونے نہیں دیں گے ۔ان کا کہنا تھا کہ آرٹیکل 62,63اصل حالت تھے تو اس پر ابہام نہیں تھا لیکن جب سابق آمر ضیا الحق نے ترامیم شامل کیے تو بہت سے ابہام پیدا ہو گئے ،ہم میں سے کوئی بندہ بھی اس پر پورا نہیں اترتا ۔انہوں نے کہا کہ آرٹیکل 62,63کو اصل حالت میں واپس لانے کی سب سے زیاد ہ مخالف نواز شریف نے کی اور اب اس آرٹیکل کا ڈنڈا بھی سب سے پہلے نواز شریف کو پڑا ہے ۔
میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ اگرچہ ہمارے بہت سے تحفظات ہیں لیکن سپریم کورٹ کے فیصلے کو سپورٹ کرتے ہیں ،لیکن اب ڈر ہے کہ کیس کے فریقین اس مسئلے کو اپنے درمیان تنازعے کی وجہ نہ بنا لیں ،تمام فریقین سے اپیل ہے کہ آپس میں نہ لڑیں کیونکہ اس وقت ملک کے اندرونی و بیرونی حالات ایسے ہیں کہ ہم کسی بھی بحران کے متحمل نہیں ہو سکتے ۔ان کا کہنا تھا کہ ایک سال سے سیاسی لیڈر شپ اور میڈ یا پاناما کے قیدی بنے ہوئے تھے ،ہمیں دنیا میں کوئی دوسرا مسئلہ نظر نہیں آرہا تھا ،اب پاناما منطقی انجام تک پہنچ گیا ہے ،اب اصل مسئلوں پر توجہ دی جائے ۔

0 comments

Write Down Your Responses