دہشتگردی کے3 واقعات میں بلوچستان کی کالعدم تنظیم بلوچ رجمنٹ آرمی کے ملوث ہونے کا انکشاف

اسلام آباد(انویسٹی گیشن ٹیم) خوشخال خان خٹک ایکسپریس اورشالیمارایکسپریس ٹرینوں پرہونے والے دہشتگردی کے3 واقعات میں بلوچستان کی کالعدم تنظیم بلوچ رجمنٹ آرمی کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔
خفیہ اداروں نے شالیمارایکسپریس حملے میں ملوث ماسٹرمائنڈکوگرفتارکرکے تحقیقات شروع کردی ہیں جبکہ پاکستان ریلوے نے مسافر بردار ٹرینوں کو محفوظ بنانے کے لیے ٹرینوں میں جیمر لگانے سمیت دیگر خصوصی اقدامات شروع کردیے ہیں،خفیہ اداروں اورپولیس نے سرچ آپریشن بھی شروع کردیاہے۔دہشت گردی کے مذکورہ واقعات میں گرفتارافرادسے تحقیقات سے انکشاف ہوا کہ 17 جنوری کوخوشخال خٹک ایکسپریس پرریموٹ کنٹرول بم سے حملہ کیاگیاجس سے 498فٹ ٹریک تباہ ہوگیاتھا، واقعے کی ایف آئی آرعمرکوٹ پولیس اسٹیشن میں درج کی گئی جبکہ5 ملزمان کی شناخت ہوگئی ہے۔
4 فرووی کوکراچی کے نزدیک دھابیجی کے مقام پرنائٹ شالیمارایکسپریس کے ٹریک پر6 کلو بارودنصب کیا گیا تھا جسے ریموٹ کنٹرول سے اڑایا گیا جس سے795فٹ ٹریک تباہ ہوگیاتھا، اس واقعے میں 15  مشکوک افراد کو گرفتارکرکے ان سے تحقیقات کی گئیں۔ 16 فروری کوایک بارپھرخوشخال ایکسپریس ٹرین پر جیکب آبادکے نزدیک حملہ کیاگیا۔ان واقعات میں ملوث کالعدم تنظیم بلوچ رجمنٹ آرمی کے ماسٹرمائنڈ کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ریلوے ذرائع  کے مطابق سندھ، پلوچستان اورجنوبی پنجاب کی سرحد کے ریلوے ٹریک کے گردبلوچستان سے نقل مکانی کرکے آبادہونیوالے گروہ ان واقعات میں ملوث ہیں۔

0 comments

Write Down Your Responses