قبرستانوں کی چاردیواریوں اور جنازگاہوں کی بحالی کی 43سکیموں میں سے 39مکمل ہوچکی ہیں ،نورالامین مینگل کی

فیصل آباد (سلیم شاہ ،چیف انوسٹی گیشن سیل)حکومت پنجاب کی ہدایات پر ضلع میں 7کروڑ27لاکھ روپے کے فنڈز سے قبرستانوں کی چاردیواریوں اور جنازگاہوں کی بحالی کی 43سکیموں میں سے 39مکمل ہوچکی ہیں جبکہ بقیہ سکیموں پر تعمیراتی کام تیزی سے جاری ہے ۔یہ بات ڈی سی اونورالامین مینگل کی زیرصدارت منعقدہ اجلاس کے دوران بتائی گئی جس میں مختلف ترقیاتی پروگرامز کے تحت جاری ترقیاتی منصوبوں کی پیش رفت کا جائزہ لیاگیا۔اجلاس میں ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ایف ڈی اے محمد احمد رجوانہ،ایم ڈی واسا سید زاہد عزیز اور ترقیاتی منصوبوں پر عملدرآمد کرنے والے محکموں کے افسران نے شرکت کی۔اس موقع پرڈی او(پلاننگ)مہر رمضان نے بریفنگ کے دوران بتایا کہ ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت20کروڑ روپے کی لاگت سے 82ترقیاتی سکیموں پر کام جاری ہے جن میں 56فیصد فنڈز استعمال کئے جاچکے ہیں اسی طرح ضلع کے سکولوں میں عدم دستیاب سہولتیں فراہم کرنے کیلئے 17کروڑ90لاکھ روپے سے شروع کی گئی75میں سے 51سکیمیں مکمل کرلی گئی ہیں جبکہ 11کروڑ81لاکھ روپے کے شوگر سیس فنڈز سے سڑکوں کی تعمیر کی 19سکیموں میں سے چار مکمل اور15پر کام جاری اور25کروڑ33لاکھ روپے کے فنڈز سے مختلف سڑکوں کی مرمت وبحالی کی 26سکیموں پر عملدرآمد کیا جارہا ہے ،محکمہ لوکل گورنمنٹ کی زیرنگرانی 18کروڑ روپے سے گلیوں ونالیوں کی تعمیرسمیت دیگر شعبوں میں 77ترقیاتی سکیموں میں 13مکمل اور 64پر کام جاری ہے ۔اجلاس کے دوران ایک ارب 47کروڑ 55لاکھ روپے کے فنڈزسے ایف ڈی اے،واسا اور دیگر محکموں کی طرف سے جاری 162ترقیاتی سکیموں کی پیش رفت کا جائزہ لیتے ہوئے ڈی سی او نے متعلقہ افسران کو حکم دیاکہ وہ مقررہ وقت میں ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کے لئے تمام تر پیشہ وارانہ توانائیاں بروئے کار لائیں۔انہوں نے بعض سکیموں کی سست روی پر برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ آئندہ دوہفتوں میں اگر پراگریس بہتر نہ ہوئی تو متعلقہ افسران کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔انہوں نے محکمانہ امور میں شفافیت اورترقیاتی منصوبوں کے اعلیٰ تعمیراتی معیار کو یقینی بنانے کی بھی تاکید کی۔

0 comments

Write Down Your Responses