پنجاب حکومت کے جاری کردہ کیمیکل بائی لاز پر عرصہ تقریباً دس ماہ گزرنے کے باوجود عمل درآمد نہ ہوسکا

ہارون آباد ( ایم وی این نیوز نمائندہ خصوصی) پنجاب حکومت کے جاری کردہ کیمیکل بائی لاز پر عرصہ تقریباً دس ماہ گزرنے کے باوجود عمل درآمد نہ ہوسکا ۔صوبہ پنجاب کے 36اضلاع میں ڈسٹرکٹ اینڈ سٹی گورنمنٹ ریگولیشن آف ٹریڈ اینڈ کیمیکل ماڈل بائی لاز 2013ء کی خلاف ورزیاں کرتے ہوئے با اثر افراد بغیر لائسنس تیزاب فروخت کا کاروبار دھڑلے سے کر رہے ہیں ،ستم ظریفی کی حد ہے کہ پنجاب بھر میں لائسنس تو درکنار کیمیکلز فروخت کرنے والوں کا سروے تک مکمل نہیں کیا جا سکا ۔ذرائع کے مطابق پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈینس 2001ء کے تحت بغیر لائسنس تیزاب فروخت کرنے پر تین سال تک کی قید ،پندرہ ہزار روے تک کا جرمانہ اور کاروبار بند کرنے کی سزا ہے ۔قومی شناختی کارڈ کے بغیر کوئی لائسنس ہولڈر بھی تیزاب فروخت نہیں کر سکتا ۔شہریوں محمد وقاص ،عبداللہ ،ذیشان ،یاسر ،محمد علی ،اخلاق ،عمران و دیگر کا کہنا ہے کہ تیزاب کے غیر محفوظ استعمال کی وجہ سے متعلقہ مارکیٹوں سے اٹھنے والے تیزابی بخارات نے ملحقہ آبادیوں کے لوگوں کا سانس لینا مشکل کردیا ہے بلکہ سانس ،ناک ،گلے سمیت جلدی امراض میں بھی اضافہ ہوگیا ہے ۔شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب ،چیف سیکرٹری پنجاب ،کمشنر بہاولپور ڈویژن اور ڈی سی او بہاولنگر اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے

0 comments

Write Down Your Responses