حاصل پورکے نواحی چک 59/ ایف میں خانہ بدوش لڑکی سے پانچ آفرادکی مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی

حاصل پور ( ایم وی این نیوز انویسٹی گیشن ٹیم) چک 59/ایف کی رہائشی ربینہ بی بی کو چک کے بااثرزمیدار محمد اصغر اور دیگر ساتھیوں نے مل کر خانہ بدوش فیملی کو اغوا کرکے اپنے ڈیرے پر لے گئے جہاں پر وہ انکو تشدد کا نشانہ بناتے رہے منیرہ بی بی نے میڈیا کو بتایاکہ ملزمان ہمارے گھر آئے اور بہانے سے مجھے اور میری بیٹی روبیہ بی بی اور بھتیجی ریحانہ کوثر اور نزیراں بی بی اور بھتیجا امجد علی اور میرے ماموں شیر محمد کو اپنے گھر لے گئے وہاں پر ملزمان 3تا6 مسلح اسلحہ موجود تھے جنکے حوالے کر دیا ۔ جو ہمیں گھر کے ساتھ ملحقہ ڈیرہ پر لے گئے ہمیں ایک کمرہ میں بند کر دیا اور میری بیٹی روبینہ بی بی کو ایک علیحدہ کمرے میں لے گئے اور وہاں اُس کے ساتھ ملزم عامر اور کاشف باری باری مبینہ طور پر دودن زیادتی کرتے رہے اورہم روبینہ بی بی کی چیخ و پکار سنتے رہے ۔ ادھر ہم کو مارتے پیٹے گھسیٹے رہے اور پانی کے ڈرم میں غوطے دیتے رہے اور پنکھے کے ساتھ لٹکاتے رہے ۔ ملزمان نے روبینہ بی بی کی حالت غیر ہونے پراس کوچھوڑکر فرار ہوگئے پولیس نے روبینہ بی بی کو بے ہوشی کی حالت میں تحصیل ہیڈکواٹر ہسپتال پہچادیا متاثرین نے چیف جسٹس آف پاکستان سے فی الفور نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے
ایم وی این نیوزانویسٹی گیشن ٹیم کی تحقیقات کے مطابق کچھ دن پہلے ملزم محمد اصغر کی بیٹی جو کہ گھر سے بازا خریداری کے آئی اور اس نے اپنے ساتھ بازار لے کر آئی کیونکہ متاثرہ بچیاں جو گھروں میں کام کرتی ہے، اپنے مالک کے ساتھ آنا جا ناہوتا ہے، اس دن ملزم کی بیٹی ان کو اپنے ساتھ لے آئی ااور ان سے کہا کہ تم ادھر روکو میں سامان لے کر آتی ہو لیکن ملزم کی بیٹی اپنے آشناء کے ساتھ بھاگ گئی اسی وجہ سے ملزم نے ہوش کے بجائے جوش سا کام لیتے ہو ئے اجتماعی زیادتی اور تشدد کا نشانہ بناتے رہے جبکہ متاثرہ فریق نے بار بار کہا
ہمیں کوئی علم نہ ہے 

0 comments

Write Down Your Responses