پیٹرول پمپ ڈیلرز ایسوسی ایشن کی طرف سے پانچ فیصد کمیشن کا مطالبہ کی منظوری نہ ہونے پر دوسرے روز بھی ہٹرتال جاری

وہاڑی(انویسٹی گیشن ٹیم)پیٹرول پمپ ڈیلرز ایسوسی ایشن کی طرف سے پانچ فیصد کمیشن کا مطالبہ کی منظوری نہ ہونے پر دوسرے روز بھی ہٹرتال جاری ہے دفاتر اور سکول جانے وال لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا شہریوں نے اس حوالے سے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت پہلے ہی دنیا کے مقابلہ میں پاکستان میں بہت زیادہ ہے اور اگر پانچ فیصد مزید دو بھر ہو جائیگا پیٹرولیم ایسوسی ایشن آپس میں گٹھ جوڑ کرکے عوام کو لوٹنے کا پروگرام بنا رہے ہیں حالانکہ بعض پیٹرول پمپس کے پیمانے پہلے ہی پورے نہ ہیں جسکی وجہ سے شہریوں کو معاوضہ کے عوض پورا تیل نہیں مل رہا ، دوسری طرف پیٹرول پمپ ڈیلرز ایسوسی ایشن کے عہدیداران کا کہنا ہے کہ جب تک ان کے مطالبات پورے نہ ہونگے اسوقت تک وہ ہٹرتال جاری رکھیں گے ، دوسری طرف موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے منی ایجنسی ہولڈر دو دنوں میں لاکھوں روپے کما گئے ہیں فی لیٹر 200روپے سے 250روپے فی لیٹر سیل جاری ہے متاثرہ عوام نے ڈی سی او جواد اکرم سے اصلاح و احوال اور ناجائز منافع خوروں سے کاروائی کا مطالبہ کیا ہے بعد ازاں شہریوں کے احتجاج کے بعد پیٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن کے رہنما اور مرکزی انجمن تاجران کے چیئرمین محمد افضل برکت نے اپنا پیٹرول پمپ کھول دیا اور تیل کی فروخت شروع کردی جہاں دیکھتے ہی دیکھتے شہریوں کی لمبی لمبی لائینیں لگ گئی جس کو کنٹرول کرنے کیلئے ڈی ایس پی مختار جوئیہ نفری کے ہمراہ پہنچ گیا اور لوگوں کو لائینیں بنا کر تیل حاصل کرنے کیلئے کہتے رہے اس موقع پر ہٹرتال کے ستائے شہری بوتلیں اور کینیں لے کر پہنچ گئے اور ایک دوسرے پر بازی لینے کی کوشش کرتے ہوئے متعدد افراد کی زخمی ہونے کی اطلاع بھی مل

0 comments

Write Down Your Responses