لومیرج کا بدلہ ۔۔ 50سالہ بوڑہی خاتون کو پندرہ مسلح افراد نے اغوا کرلیا برہنہ کر کے تین افرادریپ کرتے رہے

بہاول پور(ڈپٹی انچارج انویسٹی گیشن )تحصیل خیرپورٹامیوالی بستی لوہاراں میں انسانی حقوق کی پامالی لاقانونیت اور درندگی کی انتہاء عدالتی لو میرج کا بدلہ لینے کیلئے دلہن شازیہ کے 17مسلح افراد نے دولہے پھول خان کے گھر میں دھاوا بول دیا ہوائی فائرنگ کی اہل خانہ کو گن پوائینٹ پر یر غمال بنالیا تشدد کیااور50سالہ بوڑہی ماں کو زبردستی اغوا کر کے لے بستی شاہ والی لے گئے وہاں مکمل طور پر برہنہ کردیا اور باری باری تین نوجوان چیختی چلاتی بوڑہی خاتون کے ساتھ گینگ ریپ کیا بعد ازاں ایک زمنیدار کے گھر پہنچا دیا جیسے پولیس نے برآمد کیا اور مجسٹریٹ کو بیانات قلمبند کرائے میڈیکل رپورٹ میں ریپ ثابت ہونے پر پولیس نے اغوا اور ریپ کا مقدمہ درج کر لیا تاحال ملزمان گرفتار نہ کیئے گئے ہیں ۔متاثرہ خاتون نے روتے ہوئے میڈیا کو اپنی داستان سنائی اور بیانات بھی ریکارڈ کرائے ہیں۔تفصیل کے مطابق خیرپورٹامیوالی کے نواحی قصبہ لوہاراں والا اسرانی کے رہائشی ظہور احمد داد پوترہ کے بیٹے پھول خان نے بستی شاہ والی کے عبدلمجید داد پوترہ کی بیٹی کو لے جاکر عدالت بہاولپور میں نکاح کر لیا جس کے نتیجہ میں شازیہ کے ورثاء کو شدید رنج پہنچا 17افراد جن میں مجید خان۔ مہنگے خان ۔عباس ۔محبوب خان ۔بلال ۔پنا۔ایوب۔سجاد۔اقبال۔خضرخاں۔پپاخان۔حاجی نواز خان۔بانا۔وغیرہ مسلح ہوکر بستی لوہاراں پہنچے اور دن دیہاڑے ہی چادرچاردیواری کا تقدس پامال کیا اورپھول خاں کے گھر پر دھاوا بول دیا ہوائی فائرنگ کی گن پوائینٹ پر اہل خانہ کو یرغمال بنا لیا تشدد کی انتہاء کردی پھول خان کی 50سالہ ماں بشیراں مائی کو زبردستی اغوا کرلیا اور اپنی بستی شاہ والی لے جاکر درجنوں لوگوں کے سامنے برہنہ کرکے تین افراد بلال ۔محبوب ۔اور بانا باری باری ایک کمرے میں ریپ کا نشانہ بناتے رہے اور بوڑہیا چیختی چلاتی رہی کوئی بھی مدد کو نہ آیا اسی حالت میں متاثرہ کو ایک زمیندار کے گھر پہنچایا گیا جہاں سے پولیس نے ورثا ٗ کی مدد سے برآمد کیا اور مجسٹریٹ کے ربرو بیانات قلمبند کرائے میڈیکل میں ریپ ثابت ہونے پر 494/2013اغوا اور زناہ درج کر لیا تاحال ملزمان گرفتار نہ ہوئے ہیں ادھر متاثرہ خاتوں بشیراں مائی نے روتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ میرے اوپر ظلم کے پہاڑ توڑے گئے ہیں مجھے درجنوں لوگوں کے سامنے برہنہ کیا گیا اور بعد ازاں مجھے ایک کمرے میں نواز خان کی ہدائیت پر ریپ کا نشانہ بنایا گیا ہے میں کسی کو منہ دکھانے کے قابل نہ رہی ہوں میری زندگی اجیرن بنا دی گئی ہے میں مرنا چاہتی ہوں چیف جسٹس سپریم کورٹ اور اعلیٰ حکام فی الفور نوٹس لیں ملزمان کو فوری گرفتار کیا جائے وگرنہ میں جان دے دونگی۔۔

0 comments

Write Down Your Responses