سرکاری اراضی اور پلاٹ کی خریدوفروخت کا بھی سلسلہ شروع

بہاول پور ( ساجد چستی انویسٹی گیشن ٹیم)بہاولپور کے نواحی گاؤں13 بی  سی کا رہائشی عبدالغفور جس نے مبینہ طور پر نہ صرف 13بی سی میں سکول کا کل رقبہ 16 کنال ہے جبکہ دس کنال پے سکول آباد ہے اور بچے سکول میں پڑھ رہے ہیں اور باقی 6 کنال میں عطائی ڈاکٹر نے قابض کرکے مختلف لوگوں کو سیل کیا ۔ اور سرکاری اراضی اور پلاٹ کی خریدوفروخت کا بھی سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ عرصہ دراز سے میڈیا میں خبر کی نشر و اشاعت پر علاقہ کے اس قبضہ گینگ کے سرغنہ کے خلاف شکایات کے انبار لگا دئیے بلکہ دیگر افراد کو ایک طرف بلکہ اس کے سوتیلے بھائی شیر محمد ولد عبدالستار نے بھی اس کے ظلم و جبر اور استحصال پسندی سے پردہ اٹھانے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی مگر عطائی ڈاکٹر عبدالغفور مذکور نے رپورٹنگ ٹیم کے ارکان کو خبر نشر اور شائع کرنے پر مک مکا کے علاوہ اپنے تعلقات اور اثرو رسوخ کے علاوہ چمک کی دمک کے ذریعے سنگین نتائج کی دھمکیاں دینا بھی شروع کر دی ہیں ۔ قیمتی سرکاری اراضی کو واگزار کروانے کے لیے بھی خصوصی دلچسپی لی جائے۔ اور اگر فوری طور پر اصلاح احوال کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات اور کارروائی نہ کی گئی تو پھر یہ بھی ممکن ہے کہ وہ مزید سرکاری و غیر سرکاری اراضی کو ہڑپ کر جائے۔ڈاکٹر عبدالغفور میڈیا کو عدالت میں جھوٹے مقدمات میں ملوث کر رہا ہے۔ علاقہ مکینوں شیر محمد ، عبدالرشید جٹ، صفدر گجر، دلشاد آرائیں ، محمد نصیر ، محمد رفیق و گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول 13/bc بہاولپور، سکول کی ایڈمن میڈم آسیہ صدیقی سمیت درجنوں افراد نے وزیر اعلیٰ پنجاب ، چیف جسٹس ، اور وفاقی وزیر تعلیم سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ایسے ظالم عطائی و قبضہ مافیا کے سرپرست سے علاقہ کے لوگوں کو نجات دلائی جائے اور اس کے خلاف سخت سے سخت قانونی کاروائی کی جائے تاکہ آئندہ کوئی شخص سرکاری الاٹمنٹ اراضی کو ذاتی ملکیت سمجھتے ہوئے دیدہ دانستہ فروخت نہ کرے۔

0 comments

Write Down Your Responses