صحافیوں کے قاتلوں سزانہ ملنے کیخلاف عالمی دن کے موقع پرنیشنل پریس یونین کے زیراہتمام تقریب‘پاکستان صحافیوں کے لیے خطرناک ملک بن چکاہے، وزیراعظم فی الفور سپیشل پبلک پراسیکیوٹر کاتقررکریں،صحافتی تنظیموں کے اجلاس کامشترکہ مطالبہ

بہاول پور (اقبال انجم ڈپٹی انویسٹی گیشن انچارج ) نیشنل پریس یونین کے زیراہتمام مقامی ہوٹل میں مجرموں کو سزا نہ ملنے کے خلاف عالمی دن کے موقع پر ایک تقریب صدراحسان احمدسحرکی زیرصدارت منعقد ہوئی جس میں بہاول پوریونین آف جرنلسٹس کے ضلعی جنرل سیکریٹری مظہررشید مہمان خصوصی کے طورپر شریک ہوئے۔ اجلاس میں رورل میڈیانیٹ ورک پاکستان کی ایک رپورٹ پیش کی گئی جس میں بتایاگیا ہے کہ 2011ء سے لے کراب تک 41پاکستانی صحافی پیشہ وارانہ فرائض کی انجام دہی کے دوران جان سے ہاتھ دھوبیٹھے ہیں مگرابھی تک کسی صحافی کے قاتل گرفتارنہیں کیے جاسکے۔ رپورٹ میں کہاگیا ہے کہ صحافیوں کے قاتلوں کوسزانہ ملنا، حکومت قانون نافذ کرنے والے اداروں اور عدلیہ کی ناکامی ہے۔ رپورٹ میں 14سفارشات پیش کی گئیں جس کی اجلاس میں منظوری دی گئی۔ اس میں وزیراعظم نوازشریف سے مطالبہ کیاگیاکہ وہ2000ء سے لے کراب تک قتل کیے جانے والے سوسے زائد صحافیوں کے مقدمات کوآگے بڑھانے کیلئے سپیشل پبلک پراسیکیوٹر کاتقرر کریں اور چاروں صوبائی دارالحکومتوں میں اس کے ذیلی دفاترقائم کیے جائیں۔ اجلاس میں شریک نیشنل پریس یونین، بی یوجے کے اراکین اور مختلف پریس کلبوں کے نمائندگان نے رورل میڈیانیٹ ورک پاکستان کی سفارشات کی منظوری دی۔ پریس کلب چنی گوٹھ کے سرپرست شاہدبشیرچوہدری نے کہاکہ جنوبی پنجاب میں بھی صحافیوں کو شدت پسند تنظیموں، جاگیرداروں، وڈیروں اور ریاستی اداروں کے دباؤ اوردیگر خطرات کاسامناکرناپڑرہاہے جبکہ مقتول صحافیوں کے مجرموں کوسزانہ دینے پرایک نیاکلچر پروان چڑھ رہاہے اور اس کے نتیجہ میں پاکستان آج صحافیوں کے لئے خطرناک ملک بن چکاہے۔ بہاولپوریونین آف جرنلسٹس کے ضلعی جنرل سیکریٹری مظہررشید نے کہاکہ پی ایف یو جے صحافیوں کے حقوق اور مفادات کے تحفظ کیلئے عملی اقدامات کررہی ہے جبکہ بی یوجے نے بھی ہمیشہ صحافیوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کے خلاف آواز بلند کی ہے۔ نیشنل پریس یونین کے صدراحسان احمدسحر نے صدارتی تقریرمیں کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کو اپنی جلسوں اور ریلیوں کی کوریج کیلئے ایک ضابطہ اخلاق ترتیب دیناچاہئے تاکہ ان کی کوریج کرنے والے صحافیوں کومشکلات کاسامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ 12برسوں میں امریکی صحافی ڈینیل پرل کے قاتلوں کے علاوہ کسی بھی ایک پاکستانی صحافی کے قاتلوں کوگرفتارنہ کرناایک بڑا المیہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ وقت کاتقاضاہے کہ پاکستان کے مقتول صحافیوں کو گرفتار کرنے اور انہیں سزا دینے کیلئے پبلک پراسیکیوٹرکاتقرر کیاجائے اور صحافیوں کو لائف انشورنس مہیاکی جائے۔ تقریب سے آرایم این پی کے تحصیل کوآرڈینیٹر محمدسلیمان فاروقی اور رورل میڈیانیٹ ورک کی کوآرڈینیشن کمیٹی کے رکن سید تنویرالحسن بخاری نے بھی خطاب کیا۔ تقریب میں شرکاء کے اعزاز میں مظہررشید مسن جنرل سیکریٹری بی یوجے نے ظہرانہ بھی دیا۔ 

0 comments

Write Down Your Responses