کوریاکی ینگ نیم یونیورسٹی اور زرعی یونیورسٹی فیصل آباد میں گلوبل سیمال تحریک کے فروغ کے حوالے سے سمجھوتے پر دستخط

فیصل آباد( سلیم شاہ ،چیف انوسٹی گیشن سیل ) کوریاکی ینگ نیم یونیورسٹی اور زرعی یونیورسٹی فیصل آباد نے پاکستان میں گلوبل سیمال تحریک کے فروغ اور دیہی ترقی میں کمیونٹی کی عملی شرکت کی حوصلہ افزائی کے حوالے سے تعاون کے سمجھوتے پر دستخط کئے ہیں۔ ینگ نیم یونیورسٹی میں پاک چونگ سکول آف پالیسی اینڈ سیمال (دیہی ترقی) کے ڈین پروفیسرڈاکٹر پارک سیونگ وو اور زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے وائس چانسلرپروفیسرڈاکٹر اقرار احمد خاں نے نیو سنڈیکیٹ ہال میں یونیورسٹی کے ڈائریکٹر بیرونی روابط ڈاکٹر اشفاق احمد چٹھہ اور اعلیٰ انتظامی افسران کی موجودگی میں معاہدے پر دستخط کئے۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں کورین ڈین پالیسی سازی و دیہی ترقی ڈاکٹر پارک سیونگ وو نے کہا کہ پاکستان دیہی و زرعی معیشت ‘ہنرمند افرادی قوت اور ذرخیز زمین و موزوں آب و ہوا کی بدولت دنیا کی 12بڑی معیشتوں میں شمار ہونے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ان کا اولین دورہ پاکستان گزشتہ ماہ پاکستان میں کورین سفیر کی یونیورسٹی آمد کا نتیجہ ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ 1970ء سے قبل کوریا کی زیادہ تر دیہی آبادی شراب نوشی‘ جوئے اور مختلف جھگڑوں اور اختلافات کی وجہ سے غربت کی انتہائی سطح کو چھو رہی تھی تاہم سابق کورین صدر پارک چونگ ہی نے پوری قوم میں خود اعتمادی‘ خود انحصاری اور ترقیاتی کاموں میں دیہی آبادی کی شرکت کو یقینی بناتے ہوئے دیہی ترقی کی بے مثال بنیاد رکھی جس کی وجہ سے دیہی معیار زندگی میں اضافہ اور مینوفیکچرنگ ‘ سروسز و انڈسٹری کے شعبوں میں رشک آفرین بڑھوتری ممکن ہوئی اور آج کوریا میں فی کس آمدنی 79 امریکی ڈالر سے بڑھ کر 30ہزار امریکی ڈالر سے تجاوز کر چکی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ کورین انٹرنیشنل کوآپریشن ایجنسی (کوئیکا) ترقی پذیر ممالک میں ایجوکیشن‘ ایگریکلچرل‘ فارسٹری‘ صحت‘ گورننس‘ انوائرمنٹ‘ موسمیاتی تغیرات‘ انڈسٹری و انرجی کے شعبہ جات میں شراکت داری بنیادوں پر ترقیاتی منصوبوں کی حوصلہ افزائی کر رہی ہے۔ ڈاکٹر پارک سیونگ وونے بتایا کہ دیہی سطح پر ترقی کے اہداف کیلئے بہترین قائدانہ صلاحیتوں کے ساتھ کمیونٹی کے ذمہ داران کو مجوزہ منصوبے کا ہم خیال بناتے ہوئے دیگر افراد کے مائنڈسیٹ کو تبدیل کرکے ترقی کا حصہ دار بنانا ہی اصل کامیابی ہے لہٰذاپاکستان جیسے ترقی پذیر معاشرے میں کوئی بھی ایسا منصوبہ شروع کرنے سے پہلے ابتدائی سروے انتہائی اہمیت کا حامل ہوگا۔ اس موقع پر زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے وائس چانسلرپروفیسرڈاکٹر اقرار احمد خاں نے بتایا کہ ان کا ادارہ اساتذہ اور طلبہ کے ذریعے ہفتے میں پانچ روز تعلیمی سرگرمیوں کے بعد چھٹے دن آؤٹ ریچ اور دیہی زراعت میں بہتری کے مختلف منصوبوں میں عملی شمولیت یقینی بناتا ہے۔ڈاکٹر اقرار احمد خاں نے بتایا کہ زرعی یونیورسٹی میں پیداواری بڑھوتری کے ذریعے دیہی ترقی کو وقوع پذیر کرنے کے حوالے سے مختلف منصوبوں پر کام جاری ہے کورین یونیورسٹی کے ساتھ تعاون کے سمجھوتے کے بعد مشترکہ اکیڈمک ‘ریسرچ ہداف کے ساتھ ساتھ طلبہ اور اساتذہ کے تبادلوں کی راہیں کھلیں گی۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی میں رورل ہوم اکنامکس‘ رورل سوشیالوجی اور ایگری ایکسٹینشن و رورل ڈویلپمنٹ کے شعبہ جات ملک میں دیہی ترقی اور غربت کے خاتمے کیلئے کوششیں بروئے کار لا رہے ہیں جس کے نتائج عام آدمی تک پہنچانے کیلئے ہمیں مزید شدت سے کام کرنا ہوگا

0 comments

Write Down Your Responses