پورے سندھ کے تعلیمی اداروں میں بغیر کسی رنگ و نسل کے معیاری تعلیم فراہم کی جارہی ہے

میرپورخاص( ایم وی این نیوز ) سینئیر صوبائی وزیر تعلیم نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کہ پورے سندھ کے تعلیمی اداروں میں بغیر کسی رنگ و نسل کے معیاری تعلیم فراہم کی جارہی ہے تاکہ نوجوان تمام درپیش چئلینجز کا مقابلا بآسانی کر سکیں ۔ یہ بات انہوں نے میرپورخاص جیم خانہ میں نذیر حسین اسٹیٹوٹ اینڈ ایمرجنگ سائنسز کے پہلے کانووکیشن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پڑھے لکھے نوجوان مستقبل کے معمار ہوتے ہیں اور وہی زندگی کے چیلئنجز کا بہتر طور پر مقابلا کر سکتے ہیں ۔صوبائی وزیر نے کہا کہ معیاری تعلیم اور معیاری اداروں کی مدد سے ہی ترقی یافتہ ممالک اور دنیا کے چئلینجز کا مقابلا کیا جا سکتا ہے اس لئے سندھ حکومت معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کر رہی ہے ۔انہوں نے ڈگری حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ تعلیم کے شعبے میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ دنیا کے دیگر چئلینجز سے مقابلا کرنے کے لئے بھی تیاری کریں ۔ اور کہا کہ مجھے خوشی ہے کے سندھ یونیورسٹی معیاری تعلیم کی فراہمی اور نوجوان طلبہ و طالبات کو معیاری تعلیم فراہم کرنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کر رہا ہے اور کہا کہ سندھ یونیورسٹی کی جانب سے سندھ کے مزید علاقوں میں 6کئمپس قائم کئے جا رہے ہیں تاکہ طلبہ و طالبات کو اپنے ہی علاقے میں اعلیٰ تعلیم کی سہولت بآسانی فراہم ہو سکے ۔صوبائی وزیر نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ وفاقی سروس کمیشن 12ہزار آسامیوں کے لئے امتحانات میں پورے پاکستان سے 237امیدوار کامیاب ہوئے ہیں جو ہمارے لئے لمحہ فکریہ ہے جس میں سے لاہور میں سے 95امیدوار جبکہ صوبہ سندھ سے صرف 20امیدواروں کا کامیاب ہونا اور بھی لمحہ فکریہ ہے اس لئے ہائیر ایجوکیشن کمیشن کو چاہئے کہ امیدواروں کے مقابلے کے لئے معیاری اداروں کے قیام کے لئے اقدامات کرے اور کاپی کلچر کے خاتمے کیلئے بھرپور اقدامات کرے ۔بعد اذاں صوبائی وزیر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سندھ یونیورسٹی میرپورخاص کئمپس کے تمام مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں گے۔ اس موقع پر وائس چانسلر سندھ یونیورسٹی نظیر اے مغل نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک سے مقابلے کیلئے ہمیں معیاری تعلیم کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کی بہتر خیالی اور صلاحیتوں کو اجاگر کرنے کی ضرورت ہے اور کہا کہ جس طرح ملکی معیشت کی مضبوطی کیلئے کاروبار میں بہتری کی ضرورت ہے اسی طرح کاروبار میں ہونے والی ترقی کو سمجھنا بھی نوجوانوں کی ذمہ داری ہے ۔ اور کہا کہ اس سلسلے میں سندھ یونیورسٹی جامشورو کی جانب سے میرپورخاص ،بدین، ٹھٹہ ،مٹیاری ،ہالا، سکھر، لاڑکانہ میں کئمپس قائم کئے گئے ہیں اور کہا کہ ضلع نوشہروفیروز میں بھی جلد کئمپس قائم کیا جائیگا۔انہوں نے نظیر حسین انسٹیٹیوٹ آف ایمرجنگ سائنسز کے ڈگری حاصل کرنے والے تمام طلبہ و طالبات کو مشورہ دیا کہ وہ زیادہ سے زیادہ اپنی تعلیمی میدان میں کامیابی کے ساتھ ساتھ کاروبار اور دیگر امور زندگی میں بھی کامیابی حاصل کریں ۔ بعد اذاں صوبائی وزیر نثار احمد کھوڑو نے ڈگری حاصل کرنے والے 80طلبہ و طالبات میں ڈگری سرٹیفکیٹ اور80 طلبہ و طالبات میں ہی میں سے نمایان پوزیشن حاصل کرنے والے 17 طلبہ و طالبات میں گولڈ میڈل اور سلور میڈل تقسیم کئے۔کانووکیشن تقریب میں ایم پی ایز خیر النساء مغل ، ظفر احمد کمالی، اسپیشل سیکریٹری ایجوکیشن سید ذاکر علی شاہ،ڈائریکٹر تعلیم جلیل لاشاری،چئیرمین تعلیمی بورڈ شفیق احمد خان،ایس اے خان،مفتی شریف سعیدی،حافظ صادق سعیدی،ڈائریکٹر پرائیویٹ انسٹیٹوشنز پروفیسر عبدالحمید شیخ،ڈائریکٹر کالیجز پروفیسر سعید الدین صدیقی،چیف ایگزیکیٹو نظیر حسین انسٹیٹوشنز آف ایمرجنگ سائنسز رئیس احمد خان،ایگزیکیٹو ڈائریکٹر نظیر حسین انسٹیٹوشنز آف ایمرجنگ سائنسز بھی موجود تھے۔

0 comments

Write Down Your Responses