عالمی طاقتوں کے ایران کے ساتھ نؤ کلیئر معاہدے سے خطے میں استحکام اور خوشحالی آئے گی، صدر ایوان صنعت و تجارت سہیل بن رشید

فیصل آباد( سلیم شاہ ،چیف انوسٹی گیشن سیل ) چھ عالمی طاقتوں کے ایران کے ساتھ نؤ کلیئر معاہدے سے خطے میں استحکام اور خوشحالی آئے گی۔ اس اقدام کے مثبت اثرات پاکستان کی معیشت پر بھی پڑیں گے۔ ان خیالات کا اظہار صدر ایوان صنعت و تجارت فیصل آباد انجینئر سہیل بن رشید نے اپنے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ معاہدہ عالمی طاقتوں اور ایران کی بہت بڑی کامیابی ہے جس سے نہ صرف امریکہ اور ایران کے 1979 ء سے منقطع سفارتی تعلقات نہ صرف بحال ہونگے بلکہ ایران سمیت خطے کے دیگر ممالک کو بھی خاطر خواہ فائدہ ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس اقدام سے توقع کی جاتی ہے کہ امریکہ اب پاک ۔ ایران پائپ لائن کی مخالفت بھی ترک کردیگا جس سے پاکستان کو توانائی کے بحران حل کرنے میں مدد ملے گی۔ اس ضمن میں انہوں نے تجویز دی کہ حکومت کو اس پائپ لائن کو مکمل کرنے کے اقدامات کرنا ہوں گے کیونکہ اب اس میں مغربی ممالک کی شرکت اور بھاری سرمایہ کاری کی راہ ہموار ہو رہی ہے۔ گیس پائپ لائن معاہدے کے مطابق نہ بنائی گئی تو پاکستان کو ہر سال جرمانہ ادا ا کرنا ہوگا۔ صدر ایوان نے کہا کہ بھارت کو بھی اس منصوبہ میں شرکت پر آمادہ کیا جائے کیونکہ اس سے پاکستان اور بھارت کے مابین اعتماد سازی کے علاوہ راہداری کی مد میں پاکستان کو بھاری منافع ملے گا۔ صدر ایوان انجینئر سہیل بن رشید نے کہا کہ اقتصادی پابندیوں سے ایران کی عوام اور معیشت متاثر ہوئے ہیں مگر ان کی قیادت کی دوراندیشی سے اب ان کی معیشت اور کرنسی کے مستحکم ہونے کا وقت آگیا ہے۔ پاکستان پائپ لائن منصوبہ مکمل کرنے سے تعاون کی نئی راہیں کھلنے کے علاوہ باہمی تجارت بڑھانے کیلئے بھی ٹھوس اقدامات کرے۔ ہمارے اکنامک منیجرز کو ایسے طریقے تلاش کرنے چاہیءں جن کے ذریعے پاکستان کے عوام کی حالت کو بہتر بنانا ممکن ہو جس کیلئے پڑوسی ممالک سے لین دین بڑھانا، مال کے بدلے مال اور مقامی کرنسی کے استعمال سمیت کئی آسان راستوں کی بھی گنجائش ہے۔

0 comments

Write Down Your Responses