چشتیاں میں دس اور گیارہ محرم کے سانحہ کے سلسلے میں شیعہ علماء کونسل پنجاب کے صدر علامہ مظہر عباس علوی کا وزٹ

لاہور(علی عمران علوی انویسٹی گیشن ٹیم) شیعہ علماء کونسل پنجاب کے صدر علامہ مظہر عباس علوی نے اپنے وفد کے ہمراہ چشتیاں کا دورہ کیا اور دس اور گیارہ محرم کو جلائی گئی مسجد و امام بارگاہ النجف آپٹیکل اور غازی میڈیسن کمپنی کا معائنہ کیا ۔مظہر عباس علوی صاحب نے چشتیاں کے مومینن سے ہمدردی کا اظہار کیا اور قائد ملت جعفریہ کا پیغام دیا ۔
اس کے بعد مظہر عباس علوی اپنے وفد کے ہمراہ بہاولنگر گئے اور ڈی سی او اظہر اسمعیل سے ملاقات کر کے کہا کہ آپ کے علاقے کی پولیس عوام کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکام ہوئی ہے اور شیعہ عوام عدم تحفظ کا شکار ہیں ۔شرپسند دندناتے پھر رہے ہیں انہیں کوئی روکنے والا نہیں ہے مومینن کو تحفظ فراہم کیا جائے اس کے بعد صوبائی صدر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نہایت دکھ بھرے انداز میں کہا کہ جلی ہوئی مسجد اورقرآن پاک کو دیکھ کر ہم یہ کہنے میں حق بجانب ہیں کہ لگتا ہے ہم پاکستان میں نہیں بلکہ انڈیا کے صوبے گجرات میں کھڑے ہیں ایسا ظلم تو شاید اسرا ئیل میں بھی نہیں کیا جاتا ہو انہوں نے کہا کہ حد یہ ہے کہ مسجد و امام بارگاہ جلے ہمارے گھر جلے املاک ہماری جلائی گئیں اور ہارون آباد میکلورڈ گنج میں جھوٹے مقدمات بھی ہمارے لوگوں پر قائم کیے جارہے ہیں آخر میں انہوں نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا کہ ایک سطحی کمیٹی بنائی جائے جو اس افسوس ناک واقعہ کی تحقیق کرے واضح رہے کہ چشتیاں میں مسجد ،امام بارگاہ ،قرآن مجید جلائے گئے چار عدد گھر جلائے گئے غازی میڈیسن کمپنی کا سٹاک جلا دیا گیا ۔النجف آپٹیکل و ڈینٹل کلینک جلا دیا گیا ظلم یہ ہے کہ غازی میڈیسن کمپنی کے مالک کو جھوٹے مقدمے میں گرفتار کر کے جیل میں ڈال دیا ہے

0 comments

Write Down Your Responses