شہید ہونے والے ملازمین کے گھر والوں کو 30،30لاکھ روپے دیئے جائیں گے،اور ایک ،ایک فرد کوپولیس میں بھرتی کیا جائے گا، رانا ثناء اللہ

فیصل آباد( سلیم شاہ ،چیف انوسٹی گیشن سیل ) گزشتہ روز پولیس مقابلے میں شہید ہونے والے کانسٹیبل ظہیر اورکانسٹیبل یاسین کی نماز جنازہ پولیس لائنزفیصل آباد میں ادا کر دی گئی ،جس میں وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ،کمشنر فیصل آباد سردار اکرم ،DCOفیصل آباد نور الامین مینگل،RPOفیصل آباد محمد نواز وڑائچ،CPOفیصل آباد ڈاکٹر حیدر اشرف اور پولیس کے سینئر افسران اور پولیس ملازمین کے علاوہ شہرکے معززین کی کثیر تعداد نے بھی شرکت کی دونوں شہدا ء کے جسد خاکی پاکستان اور پولیس پرچم میں لپٹے ہوئے تھے جن کو پورے سرکاری پروٹوکول کے ساتھ پولیس گارد نے اعزازی سلامی دی جس کے بعد ان کی نماز جنازہ مین گراؤ نڈ پولیس لائنز میں ادا کی گئی دوران نماز جنازہ سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے بعد از نماز جنازہ کانسٹیبل ظہیراحمد بٹ کے جسد خاکی کو61گ ۔ب چک مہاراتھانہ صدر جڑا نوالہ اور کانسٹیبل یاسین کے جسد خاکی کو 432گ۔ب گنجڑ تھانہ ستیانہ ، پولیس ایمولینس کے ذریعے ان کے آبائی گاؤں روانہ کر دیا گیا۔اس موقع پروزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ شہید ہونے والے ملازمین کے گھر والوں کو پنجاب حکومت کے اعلان کردہ رقم 30،30لاکھ روپے دی جائے گی اور اس کیسا تھ ساتھ شہداء کے خاندان میں سے ایک ،ایک فرد کوپولیس میں بھرتی کیا جائے گااس کے علاوہ شہدا ء کے لواحقین کو شہدا ء کی تنخوا ہ بھی حسب ضابطہ ادا کی جاتی رہے گی

0 comments

Write Down Your Responses